Sunday , April 30 2017
Home / شہر کی خبریں / بے روزگاروں کو وعدہ کے مطابق روزگار فراہم کرنے کا مطالبہ

بے روزگاروں کو وعدہ کے مطابق روزگار فراہم کرنے کا مطالبہ

حکومت کی وعدہ خلافی پر نوجوانوں میں بے چینی ، آر کرشنیا تلگو دیشم ایم ایل اے کا بیان
حیدرآباد۔16 مارچ (سیاست نیوز) تلگودیشم کے رکن اسمبلی آر کرشنیا نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ بے روزگار نوجوانوں کو وعدے کے مطابق روزگار کی فراہمی کے اقدامات کئے جائیں۔ اسمبلی میں بجٹ پر مباحث میں حصہ لیتے ہوئے کرشنیا نے کہا کہ حکومت نے ایک لاکھ نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنے کا اعلان کیا تھا لیکن آج تک یہ عمل شروع نہیں ہوا ہے۔ نوجوانوں میں حکومت کے وعدے سے انحراف کے سبب بے چینی پائی جاتی ہے۔ کرشنیا نے کہا کہ حکومت ایک طرف مخلوعہ جائیدادوں پر بھرتی کا دعوی کررہی ہے لیکن اس سلسلہ میں اعداد و شمار جاری نہیں کئے گئے۔ انہوں نے بتایا کہ کمزور طبقات سے تعلق رکھنے والے نوجوان کئی برسوں سے روزگار کے منتظر ہیں اور ان کی عمر بڑھتی جارہی ہے۔ اگر حکومت تقررات میں تاخیر کرے گی تو نوجوان امتحانات میں شرکت سے محروم ہوجائیں گے۔ کرشنیا نے درج فہرست اقوام و قبائل کے ساتھ ساتھ پسماندہ طبقات کے مسائل کی یکسوئی پر توجہ دینے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ میں ان طبقات کے لیے جو رقومات مختص کی جاتی ہیں ان کا مکمل خرچ ہونا چاہئے۔ ایس سی ایس ٹی سب پلان کے ساتھ پسماندہ طبقات کے لیے بھی سب پلان تیار کیا جائے تاکہ ان کی ہمہ جہتی ترقی کو یقینی بنایا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ آبپاشی پراجکٹس کی عاجلانہ تکمیل کے لیے حکومت کو اقدامات کرنے چاہئے۔ حکومت نے مقررہ مدت میں تمام پراجکٹس کی تکمیل کا وعدہ کیا ہے۔ انہوں نے پراجیکٹس کی تکمیل میں شفافیت کی ضرورت پر زور دیا۔ تلگودیشم رکن نے ایس سی ایس ٹی اور بی سی ہاسٹلوں میں درپیش مسائل کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کو طلباء کے مسائل کی یکسوئی پر فوری توجہ دینی چاہئے۔ انہوں نے ریاست میں کمزور طبقات کے لیے اقامتی اسکولس کے قیام کو خوش آئند قرار دیا۔ سی پی ایم کے رکن ایس راجیا نے مباحث میں حصہ لیتے ہوئے بجٹ کو اعداد و شمار کا کھیل قرار دیا اور کہا کہ حکومت نے اسکیمات کے لیے جو رقومات مختص کی ہیں وہ محض دکھاوا ہے۔ سابق میں بھی اسکیمات کے لیے مختص کردہ بجٹ کو خرچ نہیں کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو اپوزیشن کی جانب سے پیش کی جانے والی تجاویز کو قبول کرنا چاہئے برخلاف اس کے ٹی آر ایس حکومت اپوزیشن پر جوابی حملہ کرتے ہوئے تعمیری تجاویز کو بھی نظرانداز کررہی ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT