Tuesday , August 22 2017
Home / دنیا / تائیوان میں زلزلے ، 130 افراد زندہ دفن

تائیوان میں زلزلے ، 130 افراد زندہ دفن

تائیوان، 07 فروری (رائٹر)جنوبی تائیوان میں کل آئے زبردست زلزلہ سے ایک 17 منزلہ عمارت کے گرنے کے واقعہ میں مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 24  ہو گئی ہے اور اب بھی ایک سو تیس سے زیادہ لوگوں کے ملبے کے ڈھیر میں پھنسے ہونے کا خدشہ ہے۔ سرکاری حکام نے بتایا کہ راحت اور بچاؤ مہم دوسرے دن بھی جاری ہے ۔ مسمار عمارت کی اوپری منزل پر پہنچنے کے لئے ھائیڈرالک سیڑھیوں اور کرین کا سہارا لیا جا رہا ہے ، بہت سے لوگوں کو محفوظ مقامات پر پہنچایا گیا ہے۔ مقامی انتظامیہ کے مطابق عمارت میں 95 اپارٹمنٹ تھے اور اس میں مجموعی اعتبارسے 295 لوگ رہتے تھے ۔ کل 115 لوگوں کو محفوظ طریقے سے نکال کر انہیں اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔ واضح رہے کہ کل رات جنوبی تائیوان کے تینان شہر میں ریکٹر پیمانے پر 6.4 کی شدت والے زلزلے کے جھٹکے محسوس کئے گئے تھے۔ تائیوان کے میئر ولیم لائی نے نامہ نگاروں سے کہا کہ راحت کاری آپریشن کافی مشکل ہے اور ملبے کو ہٹانے میں کافی وقت لگ سکتا ہے ۔ انہوں نے کہا، ‘‘ہماری توجہ ان 29 افراد کو باہر نکالنے پر ہے اور راحتی کارکنان پوری مستعدی سے اپنی ذمہ داری ادا کر رہے ہیں۔ ایسا کہا جا رہا ہے کہ اس عمارت کی تعمیر میں ناقص سطح کی اسٹیل اور سیمنٹ کا استعمال کیا گیا ہو گا، جس سے زلزلے آنے پر یہ عمارت ڈھیر ہو گئی۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق ملبے میں سے نکالے گئے لوگوں میں ایک دس سال کی بچی بھی تھی جو اپنے باپ کی باہوں میں لپٹی ہوئی تھی۔
راحتی کارکنان نے ملبے میں سے 240 سے زیادہ لوگوں کو زندہ نکالا۔
ایک سرکاری ایمرجنسی سینٹر نے کل بتایا کہ 20 لاکھ کی آبادی والے اس شہر کے 9 دیگر مقامات پر بھی عمارتیں تباہ ہو ئی ہیں جبکہ پانچ عمارتیں
ایک طرف جھک گئی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT