Sunday , June 25 2017
Home / دنیا / تائیوان میں کتے اور بلی کے گوشت کی فروخت پر امتناع

تائیوان میں کتے اور بلی کے گوشت کی فروخت پر امتناع

بیجنگ ۔ 12 ۔ اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) تائیوان میں اب کتے اور بلی کا گوشت فروخت نہیں کیا جائے گا کیونکہ حکومت نے اس کی فروخت پر امتناع عائد کردیا ہے اور خلاف ورزی کرنے والوں پر جرمانہ کی رقم میں بھی اضافہ کیا گیا ہے ۔ قوانین کے مطابق جانوروں کے ساتھ بے رحمانہ سلوک برداشت نہیں کیا جائے گا ۔ بہرحال اس امتناع کے بعد ایشیاء کے چند خوشحال ممالک میں شمار کئے جانے والے ملک میں جانوروں کے خلاف بے رحمی سے متعلق بیداری کا خاطر خواہ اور مثبت نتیجہ سامنے آیا ہے ۔ ملک کی مقننہ نے تائیوان کے انیمل پروٹکشن لاء میں ترمیم کرتے ہوئے جانوروں کو نقصان پہنچانے والے کیلئے دو سال کی سزائے قید اور 2 ملین تائیوائی ڈالرس ( 65000 امریکی ڈالرس ) کا جرمانہ عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ ایسے لوگ جو کتے اور بلی کا گوشت فروخت کریں یا کھائیں گے انہیں 250,000 تائیوائی ڈالرس ( 8000 امریکی ڈالرس ) کا جرمانہ ادا کرنا ہوگا اور ساتھ ہی ساتھ ان  نام اور تصویر کی تشہیر بھی کی جائے گی ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT