Sunday , September 24 2017
Home / Top Stories / تاملناڈو میں کسانوں اور اپوزیشن جماعتوں کا ریل روکو احتجاج

تاملناڈو میں کسانوں اور اپوزیشن جماعتوں کا ریل روکو احتجاج

کاویری تنازعہ پر مرکز کے موقف کے خلاف تنقید
چینائی۔17 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) کاویری مینجمنٹ بورڈ کی فی الفور تشکیل کے مطالبہ پر تاملناڈو میں آج کسانوں اور اپوزیشن جماعتوں نے مختلف مقامات پر ریل روکو احتجاج کیا۔ سپریم کورٹ میں بی جے پی کی زیر قیادتحکومت کے اختیار کردہ موقف کے خلاف یہ احتجاج کیا گیا جس نے بورڈ کی فی الفور تشکیل سے انکار کردیا ہے۔ پولیس نے بتایا کہ ریل روکو مظاہرہ میں شامل ہزارہا احتجاجیوں کو حراست میں لے کر کمیونٹی ہالس اور شادی خانوں میں منتقل کرایا گیا جنہیں شام میں رہا کردیا جائے گا۔ کسانوں کی تنظیموں نے آج ریاست بھر میں 48 گھنٹے کا ریل روکو احتجاج شروع کیا ہے جس کی تائید اپوزیشن جماعتوں بشمول ڈی ایم کے، کانگریس، مسلم لیگ، سی پی ایم، سی پی آئی ایم اور وی سی کے نے کی ہے۔ تروچرا پلی میں کسان لیڈر پی ایا کانو کی زیر قیادت مظاہرین نے کوڈا ماروتی پل کے علاقہ میں ریلوے پٹریوں پر دھرنا دیا جس کے باعث کچھ وقفہ کے لئے ٹرینوں کی آمد و رفت میں خلل پڑگیا بعدازاں پولیس نے حراست میں لے لیا۔ مسٹر ایاکانو نے بتایا کہ یہ احتجاج کل بھی جاری رہے گا اور ویگائی سوپر فاسٹ اکسپریس روکنے کا منصوبہ ہے تاکہ مرکزی حکومت کا موقف تبیل کرنے کے لئے دبائو ڈالا جاسکے۔ دریں اثناء ڈی ایم کے خازن اور اپوزیشن لیڈر ایم کے اسٹالن کی زیر قیادت احتجاجیوں نے پریمبور سب اربن ریلوے اسٹیشن پر مظاہرہ کیا گیا جس کے نتیجہ میں سب اربن ٹرین سرویس درہم برہم ہوگئی۔ علاوہ ازیں ایم ڈی ایم کے سربراہ وائیکو اور سی پی ایم کے ریاستی سکریٹری جی رام کرشنا نے مصروف ترین چینائی سنٹرل ریلوے اسٹیشن پر اور سی پی آئی کے ریاستی سکریٹری ارستھاراسن نے تریورو میں ریل روکو احتجاج میں حصہ لیا۔

TOPPOPULARRECENT