Friday , August 18 2017
Home / ہندوستان / تاملناڈو میں 750 کروڑ روپئے کی ضبطی پر شک و شبہ

تاملناڈو میں 750 کروڑ روپئے کی ضبطی پر شک و شبہ

مناسب تحقیقات کروانے مدراس ہائی کورٹ میں درخواست
چینائی۔/17مئی، ( سیاست ڈاٹ کام ) مدراس ہائی کورٹ میں آج ایک مفاد عامہ کی درخواست پیش کرتے ہوئے 750 کروڑ روپئے کے حقیقی مالک کا پتہ چلانے کیلئے تحقیقات کی گذارش کی گئی۔ جبکہ یہ بھاری رقم الیکشن کمیشن کے حکام نے ضلع تریپورامیں تلاشی مہم کے دوران3ٹرکس سے ضبط کرلی تھی۔ سماجی کارکن ٹریفک راما سوامی نے اپنی عرضی میں اعلی حکام بشمول چیف الیکشن کمیشن، تاملناڈو چیف الکٹورل آفیسر، ریزروبینک آف انڈیا اور مرکزی حکومت کو یہ ہدایت دینے کی استدعا کی ہے کہ بھاری رقم کی ضبطی کے واقعہ کی مناسب تحقیقات کروائی جائے۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میںکل منعقدہ اسمبلی انتخابات کے نتائج کا مذکورہ واقعہ کی تحقیقات مکمل ہونے تک اعلان نہ کیا جائے۔ درخواست گذار نے کہا کہ یہ رقم ایسے وقت ضبط کرلی گئی جب سیاسی جماعتوں بالخصوص انا ڈی ایم کے اور ڈی ایم کے کی جانب سے رائے دہندوں میں رقومات تقسیم کی جارہی ہیں جس کے پیش نظر 2اسمبلی حلقوں ارواکروچی اور تنجاور میں انتخابات ملتوی کردیئے جائیں۔ انہوں نے یہ الزام عائد کیا ک گو کہ اسٹیٹ بینک آف انڈیا نے ضبط کردہ رقم پر ملکیتکا دعوی کیا ہے لیکن کرنسی نوٹس کی منتقلی کیلئے ریزرو بینک آف انڈیا کے ضابطوں کی پابندی نہیں کی گئی۔جس کے باعث عوام میں یہ شبہ پیدا ہورہا ہے کہ آیا یہ رقم انتخابات میں استعمال کی جانے والی تھی، لہذا اس کی مکمل تحقیقات کروانے کی ضرورت ہے۔

TOPPOPULARRECENT