Monday , September 25 2017
Home / کھیل کی خبریں / تاملناڈو کی دھمکی‘بی سی سی آئی کا خصوصی اجلاس ملتوی

تاملناڈو کی دھمکی‘بی سی سی آئی کا خصوصی اجلاس ملتوی

نئی دہلی۔11 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستانی کرکٹ کنٹرول بورڈ (بی سی سی آئی) آج کاخصوصی عام اجلاس چھ ریاستی کرکٹ اسوسی ایشن کے احتجاج کی وجہ سے ملتوی کر دیا گیا۔لوڈھا کمیٹی کی سفارشات کو لاگو کرنے سے متعلق سات رکنی کمیٹی کی رپورٹ پر بحث کرنے کے لئے خصوصی عام اجلاس طلب کیا گیا تھا تاکہ سفارشات کی منظوری دے دی جا سکے ۔راجیو شکلا کی صدارت والی سات رکنی کمیٹی نے گزشتہ اپنی ملاقات کی تھی اور چار نکات کو لے کر ممبران کے اعتراض کو سپریم کورٹ کے سامنے رکھنے کا فیصلہ ہوا تھا۔بی سی سی آئی کے قائم مقام چیئرمین سی کے کھنہ نے خصوصی عام اجلاس طلب کیا ۔ لیکن چھ ریاستوں تاملناڈو، ہریانہ، گوا، سوراشٹر، کیرالہ اور کرناٹک نے یہ کہتے ہوئے خصوصی عام اجلاس کی مخالفت کی کہ اتنے کم وقت میں اجلاس طلب کرنا بی سی سی آئی کے قوانین کے خلاف ہے اور ایسا اجلاس طلب کے لئے کم از کم 10 دن کا وقت دیا جانا چاہیے ۔ عام اجلاس ملتوی کرنے کیلئے مجبور ہونا پڑا۔بی سی سی آئی ابھی خصوصی عام اجلاس کی اگلی تاریخ کے لئے 15 دن کا نوٹس دے گی۔دراصل گزشتہ 26 جون کو لودھا کمیٹی کی سفارشات کو نفاذ کرنے سات رکنی کمیٹی تشکیل دی گئی تھی جس نے آٹھ جولائی کو اجلاس کیا اور اپنی رپورٹ کارگزار صدر سی کے کھنہ کو سونپی۔کھنہ کے پاس اتنے کم وقت میں خصوصی عام اجلاس بلانے کے علاوہ کوئی چارہ نہیں رہ گیا کیونکہ اس معاملے پر14 جولائی کو سپریم کورٹ میں سماعت ہونی ہے ۔بی سی سی آئی کے ایک افسر کے مطابق خصوصی عام اجلاس میں تاخیر سے خصوصی کمیٹی کی طرف سے لئے گئے فیصلوں پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔افسر نے کہا کہ خصوصی کمیٹی نے دو مرتبہ ان سے ملاقات کی ۔یہ سب کچھ منتظمین کی کمیٹی کو بتایا جا چکا ہے جو سپریم کورٹ میں حیثیت کی رپورٹ دائر کرے گی۔آج اجلاس ملتوی ہونا اس بات کی ایک اور مثال ہے کہ لودھا کمیٹی کی سفارشات کو نافذ کرنے کے خلاف بی سی سی آئی کا ایک طبقہ کس طرح تاخیر کرنے کے طریقے اپنا رہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT