Thursday , June 29 2017
Home / شہر کی خبریں / تجارتی مراکز پر کارڈ کے ذریعہ ادائیگیوں کا مسئلہ سنگین

تجارتی مراکز پر کارڈ کے ذریعہ ادائیگیوں کا مسئلہ سنگین

ریاست تلنگانہ میں اے ٹی ایم خالی ، بینکوں میں پیسہ نہیں ، عوام کو مشکلات
حیدرآباد۔11اپریل (سیاست نیوز) ریاست تلنگانہ کے بینکوں میں اب بھی نقد رقومات موجود نہ ہونے کے سبب بینک کھاتہ داروں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اورشہر کے بیشتر اے ٹی ایم اب بھی خالی پڑے ہوئے ہیں اور کئی تجارتی مراکز پر کارڈ کے ذریعہ ادائیگی قبول نہیں کی جا رہی ہے اور نہ ہی الکٹرانک ادائیگی قبول کی جا رہی ہے جس کے سبب عوام کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پر رہا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ شہر حیدرآباد کے علاوہ ریاست کے دیگر اضلاع میں بھی یہی صورتحال ہے جس کے سبب عوام میں بے چینی کی کیفیت پیدا ہونے لگی ہے اور لوگ بینک عہدیداروں سے استفسار کر رہے ہیں کہ جب بینک میں ان کی رقومات جمع کی گئی ہیں انہیں نکالنے میں کیوں دشواری پیش آرہی ہے تو بینک عہدیدار اس بات کا جواب دینے سے قاصر ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ بینکو ںمیں رقومات جمع کروانے والوں کی تعداد میں 50فیصد سے زائد کی گراوٹ دیکھی جا رہی ہے اور جاریہ ماہ کے دوران پیدا ہونے والی اس صورتحال کے اثرات آئندہ ماہ مزید تشویش کا باعث ثابت ہو سکتے ہیں۔ریاست تلنگانہ کے بینکوں میں نقد رقومات نہ ہونے کے سبب بینک نقد رقومات جاری کرنے سے اجتناب کر رہے ہیں اور اے ٹی ایم میں رقم جمع نہیں کی جا رہی ہے ۔ بینک کھاتہ دار جن کے تمام امور نقدی سے جڑے ہیں وہ بینک سے رقومات منہاء کررہے ہیں لیکن جمع کروانے سے گریز کر رہے ہیں کیونکہ جمع کی جانے والی نقد رقومات کو منہا ء کرنے میں پیش آرہی دشواریوں سے محفوظ رہا جا سکے۔ سرکاری بینکوں کے ذمہ داران نے بتایا کہ جو رقومات بینکوں کے ذریعہ منتقل کی جاتی ہیں انہیں بھی فوری طور پر کھاتہ دار منہاء کر رہے ہیںجس کے سبب بینکو ںمیں رہنے والی رقومات نہ رہنے کے سبب نقد ادائیگیوں و اجرائی میں مشکل ہونے لگی ہے اور یہی وجہ ہے کہ بیشتر اے ٹی ایم خالی رہنے لگے ہیں۔ بینک عہدیداروں نے بتایا کہ بیرون ممالک سے جو رقومات این آرآئی کھاتوں کے ذریعہ منتقل کی جاتی تھی ان رقومات کا بڑا حصہ مہینہ بھر بینکوں میں ہوا کرتا تھا لیکن نقد نکالنے میں ہونے والی دشواریوں کی کے نام پر کھاتہ دار مکمل رقومات یکمشت منہاء کرنے لگے ہیں جو کہ بینکوں کے لئے مشکل کا سبب بننے لگی ہے۔یہی صورتحال تاجرین کی بھی جو بینک میں معمول کے مطابق رقومات جمع کروانے سے اجتناب کرنے لگے ہیں اور بیشتر تجارتی اداروں کو نقد کے ذریعہ ادائیگی ممکن بنانے لگے ہیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT