Monday , August 21 2017
Home / دنیا / تحدیدات سے نیپال میںغذا اور فیول کی قیمتوں میں اضافہ : اقوام متحدہ

تحدیدات سے نیپال میںغذا اور فیول کی قیمتوں میں اضافہ : اقوام متحدہ

اقوام متحدہ 12 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) اقوام متحدہ کی غذائی ایجنسی نے کہا ہے کہ سرحدی ناکہ بندی اور ہندوستان کی جانب سے رکاوٹوں کے نتیجہ میں نیپال میں غذائی اجناس اور فیول کی قلت پیدا ہوگئی ہے اور ان کی قیمتیں آسمان کو چھونے لگی ہیں۔ ایجنسی نے فریقین سے کہا کہ وہ سرحد کے آر پار غذائی اجناس کے آزادانہ بہاؤ کو یقینی بنائیں۔ اقوام متحدہ ورلڈ فوڈ پروگرام نے خبردار کیا ہے کہ ہندوستان سے ملنے والی ساری جنوبی سرحد کے علاقہ میںغذائی اجناس اور فیول کی شدید قلت پیدا ہوگئی ہے ۔ اگر اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ کا سلسلہ نہیں رکتا ہے تو پھر یہاں عوام کو انتہائی سخت ترین مشکلات کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے ۔ اس پروگرام کے ڈائرکٹر برائے ایشیا ڈیوڈ کاٹروڈ نے ایک بیان میں کہا کہ اگر تجارت پر اسی طرح کی تحدیدات برقرار رہیں اور قیمتوں میں اضافہ کا سلسلہ جاری رہا تو ایک سنگین انسانی بحران سے بچنا بہت مشکل ہوجائیگا ۔
انہوں نے کہا کہ اس ناکہ بندی اور تحدیدات کا ماہ ستمبر میں آغاز ہوا تھا ۔ اس کا مقصدنیپال کے نئے دستور کے خلاف احتجاج کرنا تھا ۔ اس دستور کے نتیجہ میںملک میں تجارت پہلے ہی سست ہوگئی ہے اور گذشتہ تین ماہ سے ملک میں غذائی اجناس و فیول کی قلت پیدا ہوگئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ عوام کو اپنے ارکان خاندان کو غذا فراہم کرنے میں انتہائی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے کیونکہ قیمتیں ان کی پہونچ سے باہر ہوگئی ہیں۔ حالیہ زلزلہ کے بعد یہ رکاوٹ اورتحدیدات عوام کو سخت ترین مشکلات کا باعث بن رہی ہیں۔ عوام اس صورتحال سے نمٹنے کی اہلیت نہیںرکھتے اور حکومت کے اقدامات بھی کافی نہیں ہیں۔

TOPPOPULARRECENT