Wednesday , August 16 2017
Home / شہر کی خبریں / تحریک تلنگانہ کے ریل روکو قائدین کی ریلوے کورٹ میں حاضری

تحریک تلنگانہ کے ریل روکو قائدین کی ریلوے کورٹ میں حاضری

آئندہ سماعت 21 اگست کو مقرر ، گواہوں کی عدم موجودگی پر سماعت ملتوی
حیدرآباد ۔ 26 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز ) : علحدہ ریاست تلنگانہ جدوجہد کے موقعہ پر ریل روکنے کے واقعہ میں ملوث پائے جانے والے ریاست تلنگانہ کے موجودہ وزراء مسرس این نرسمہا ریڈی وزیر داخلہ ، کے تارک راما راؤ وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی و بلدی نظم و نسق ، پدما راؤ وزیر نشہ بندی و آبکاری و یوتھ سروسیس نے آج سکندرآباد ریلوے کورٹ میں حاضری دی ۔ اور کیسیس کی مکمل سماعت کرنے کے بعد ریلوے کورٹ نے آئندہ مزید سماعت و تحقیقات کے لیے 21 اگست تک کے لیے ملتوی کردیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ سال 2011 میں علحدہ تلنگانہ جدوجہد کے دوران کل جماعتی قائدین پر مشتمل گروپ نے مولا علی ریلوے اسٹیشن پر ریل روکو احتجاج منظم کیا تھا ۔ جس کے نتیجہ میں اس وقت ریل روکنے کے الزام پر 14 افراد پر ریلوے پولیس نے کیس درج رجسٹر کیا تھا ۔ بعد ازاں وزیر داخلہ مسٹر این نرسمہا ریڈی نے وہاں موجود اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ گواہوں کی عدم موجودگی و غیر حاضر رہنے کے باعث کیس کی سماعت کو ملتوی کرتے ہوئے پیشی کی آئندہ تاریخ 21 اگست مقرر کی ہے ۔ اور کہا کہ جج نے کہا کہ 21 اگست تک بھی کوئی گواہ یا ثبوت فراہم نہ کئے جانے کی صورت میں کیس کو ختم کردیا جائے گا ۔ وزیر نے مزید کہا کہ محض اس وقت جو جدوجہد کی گئی ۔ آج اسی کے نتیجہ میں ہم علحدہ ریاست حاصل کرسکے اور گذشتہ تین سال علحدہ تلنگانہ میں تلنگانہ راشٹرا سمیتی کی زیر قیادت حکومت بہت ہی اچھے انداز میں تلنگانہ کی ترقی کے اقدامات کررہی ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT