Tuesday , May 23 2017
Home / شہر کی خبریں / تحفظات بل ، چیف منسٹر کا /23 اپریل کو دورہ دہلی

تحفظات بل ، چیف منسٹر کا /23 اپریل کو دورہ دہلی

وزیراعظم نریندر مودی سے ملاقات اور تفصیلی نوٹ حوالے کریں گے

حیدرآباد ۔ 18۔ اپریل (سیاست نیوز) تلنگانہ حکومت کی جانب سے مسلمانوں کو 12 اور درجہ فہرست قبائل کو 10 فیصد تحفظات کے بل کی منظوری کے بعد محکمہ بی سی ویلفیر کے عہدیدار مرکزی حکومت سے بل کی منظوری کیلئے درکار ضروری امور کی تکمیل میں مصروف ہوچکے ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ حکومت نے بی سی ویلفیر کو ہدایت دی کہ وہ دیگر ریاستوں میں 50 فیصد سے زائد تحفظات کی تفصیلات کے ساتھ ایک جامع رپورٹ تیار کریں تاکہ گورنر کی جانب سے بل کو صدر جمہوریہ کو روانہ کرنے کے بعد ضرورت پڑنے پر یہ رپورٹ مرکز کو روانہ کی جاسکے۔ بتایا جاتا ہے کہ چیف منسٹر کے سی آر 23 اپریل کو نئی دہلی میں وزیراعظم نریندر مودی سے ملاقات کریں گے۔ نیتی آیوگ کے اجلاس کے موقع پر چیف منسٹر کی وزیراعظم سے ملاقات متوقع ہے اور کے سی آر تحفظات کے بارے میں وزیراعظم کو تفصیلی نوٹ حوالے کریں گے۔ باوثوق ذرائع نے بتایا کہ عہدیداروں سے مشاورت کے دوران چیف منسٹر نے اس بات کا اعتراف کیا کہ بی سی کمیشن کی سفارش سے زیادہ تحفظات فراہم کرتے ہوئے حکومت نے اپنے اختیارات کا استعمال کیا ہے۔ چیف منسٹر نے اس بات کا اشارہ دیا کہ اگر مرکزی حکومت آبادی کے اعتبار سے تحفظات کی فراہمی پر اعتراض کرتی ہے تو ریاستی حکومت 12 فیصد کو گھٹاکر 9 فیصد کرنے پر غور کرے گی۔ تلنگانہ میں اقلیتوں کی آبادی 12.68 فیصد ہے اور انہیں 12 فیصد تحفظات کی فراہمی پر ماہرین قانون اعتراض کر رہے ہیں ۔ عہدیدار نے بتایا کہ جس طرح بی سی کمیشن کی سفارش سے زیادہ تحفظات فراہم کئے گئے ، اسی طرح حکومت اپنے اختیارات کا استعمال کرتے ہوئے عمل آوری کا آغاز کرسکتی تھی لیکن چیف منسٹر پارلیمنٹ اور حکومت ہند سے منظوری کے خواہاں ہیں۔ بتایا جاتا ہے کہ مجموعی تحفظات 50 فیصد سے زائد ہیں تو عمل آوری کیلئے پارلیمنٹ اور صدر جمہوریہ کی منظوری لازمی ہے۔ راج شیکھر ریڈی حکومت نے 4 فیصد تحفظات فراہم کئے تھے اور مجموعی تحفظات 50 فیصد تک محدود ہوگئے لہذا ان پر عمل آوری کا آغاز کیا جاسکا تھا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT