Thursday , August 17 2017
Home / Top Stories / تحفظات کیلئے کانگریس ہمیشہ کوشاں، مجلسی قیادت مخالف

تحفظات کیلئے کانگریس ہمیشہ کوشاں، مجلسی قیادت مخالف

عوامی شعور بیداری کیلئے جناب زاہد علی خاں اور جناب عامر علی خاں سے اظہارتشکر ، نظام آباد میں محمد علی شبیر قائد اپوزیشن کونسل کا خطاب
نظام آباد ۔ 16 مئی ۔ ( محمد جاوید علی کی رپورٹ)مسلم تحفظات کے حصول کیلئے عوام میں شعور بیداری مہم کے آغاز پر مدیر سیاست جناب زاہد علی خان، نیوز ایڈیٹرجناب عامر علی خان سے ایم ایل سی وقانون ساز کونسل کے اپوزیشن لیڈر محمد علی شبیر نے اظہار تشکر کیا۔ کل نظام آباد نیشنل ہائی اسکول میں پائور پوائنٹ پرزینٹیشن ( پی پی ٹی) کے ذریعہ تحفظات کی اہمیت اور کانگریس کی جانب سے فراہم کردہ 4 فیصد تحفظات سے حاصل ہونے والے فائدہ کے بارے میں واقف کرانے کے علاوہ ٹی آرایس کی جانب سے کئے گئے 12 فیصد تحفظات کے اعلان اور مجلس کی جانب سے کی گئی مخالفتوں کے بارے میں تفصیلی طور پر عوام میں شعور بیدار کرنے کی کامیاب کوشش کی۔ نظام آباد ضلع کانگریس کے صدر طاہر بن حمدان کی قیادت میں منعقدہ اس پائور پوائنٹ پرزینٹیشن میں قانون ساز کونسل کی رکن آکولہ للیتا، سابق رکن پارلیمنٹ و کل ہند کانگریس کے ترجمان مدھو گوڑ یاشکی کے علاوہ دیگر نے بھی شرکت کی اس موقع پر مسٹر شبیر علی نے کہا کہ کانگریس پارٹی مسلمانوں کو تحفظات کی فراہمی کیلئے ابتداء سے ہی کوشاں ہے۔ پہلی مرتبہ 1989 ء میں اسمبلی کیلئے منتخب ہوتے ہی اس جدوجہد کا آغاز کیا تھااور تعلیمی دور سے ہی تحفظات کے بارے میں فکر مند تھا۔ 1992ء میں جی او 30 جاری کیا گیااور25؍ اگست 1994ء میں پٹاسوامی کمیشن کا قیام عمل میں لایا گیا کانگریس کی حکومت 1994ء میں نہیں رہی اور تلگودیشم کے 9سالہ دور میں کمیشن کی معیاد کو 9 مرتبہ توسیع دی گئی لیکن کوئی بھی کام انجام نہیں دیا گیا۔ 2004ء میں کانگریس کی حکومت اقتدار میں آتے ہی 56 دن میں 5 فیصد تحفظات فراہم کئے گئے تھے لیکن اس پر بھی موجودہ حکومت کے اٹنری جنرل راما کرشنا ریڈی نے عدالت سے رجوع ہوتے ہوئے اس پر روک لگادی تھی جس پر کانگریس نے دوبارہ بی سی کمیشن کے قیام کے ذریعہ 4فیصد تحفظات فراہم کیا تھا اور اس کے خلاف بھی عدالت میں موجودہ حکومت کے اٹنری جنرل نے جدوجہد کررہے ہیں۔ مسٹر شبیر علی نے 4فیصد تحفظات کی فراہمی سے 10 لاکھ افراد کو تلنگانہ اور آندھرا پردیش میں فائدہ حاصل ہورہا ہے اور 14 طبقات بی سی ای کے تحت تعلیمی شعبہ میں فائدہ حاصل کررہے ہیں جس کی وجہ سے اب تک 10لاکھ سے زائد طلباء و طالبات کو ڈاکٹرس، انجینئرس کے علاوہ دیگر تعلیمی شعبوں میں فائدہ حاصل ہواہے۔مسٹر شبیر علی نے پائور پوائنٹ پرزینٹیشن کے ذریعہ تمام چیزوں کو واقف کراتے ہوئے کئی جی اوز عدالت کے فیصلوں کی کاپیوں کے علاوہ تحفظات کی فراہمی کے موقع پر مجلس اتحاد المسلمین کی جانب سے کی گئی خلاف ورزی کی فلمبندی کو بھی پروجیکٹر کے ذریعہ عوام کو واقف کروایا۔ مسٹر شبیر علی نے کہا کہ موجودہ حکومت شاد نگر میں انتخابات کے موقع پر چندر شیکھر رائو نے چار ماہ میں 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے کے علاوہ اوقافی جائیدادوں کے تحفظ کیلئے اقدامات کرنے پر وقف بورڈ کو جوڈیشری موقف فراہم کرنے کا اعلان کیا تھا اور اس کی فلمبندی کو بھی پیش کیا اور بتایا کہ دو سال کا وقفہ گذر گیا لیکن ابھی تک اس خصوص میں کوئی اقدام نہیں کئے گئے اور سدھیر کمیٹی کو تحفظات کی فراہمی کا کوئی اختیار نہیں ہے اس کیلئے کمیشن کا قیام ناگزیر ہے اورٹاملناڈو طرز پر تحفظات فراہم کرنے کا اعلان کیا گیا تھا لیکن ٹاملناڈو میں 9ویں شیڈول کے تحت پیش کردہ تحفظات پر بھی سپریم کورٹ کی جانب سے نوٹس جاری کی گئی ہے ۔         ( سلسلہ صفحہ 10پر )

TOPPOPULARRECENT