Wednesday , August 23 2017
Home / ہندوستان / تحقیر عدالت کا مقدمہ : وجئے ملیا کی حاضری ضروری

تحقیر عدالت کا مقدمہ : وجئے ملیا کی حاضری ضروری

درخواست پر غور کے بعد سپریم کورٹ کا فیصلہ، سزاء کا اعلان موخر
نئی دہلی ۔ 14 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے مرکز کے اس ادعا پر آج غور کیا کہ متحارب بزنسمین وجئے ملیا کو حوالگی کا مقدمہ لندن میں زیرسماعت ہے اور کہا کہ ملیا کے خلاف تحقیر عدالت کے مقدمہ پر صرف اسی صورت میں مزید پیشرفت ہوسکتی ہے جب انہیں پیش کیا جائے۔ جسٹس اے کے گوئیل اور جسٹس یویو للت پر مشتمل بنچ نے موقف پر تازہ ترین رپورٹ کا جائزہ لیا جو اٹارنی جنرل کے کے وینو گوپال کی طرف سے پیش کی گئی تھی اور کہا گیا تھا کہ ملیا کو واپس لانے کی کوشش جاری ہیں۔ عدالت عظمیٰ جو ملیا کو دی جانے والی سزاء کا آج اعلان کیا جانے والا تھا، کہا کہ مذکورہ بزنسمین کو عدالت میں پیش کئے جانے تک اس پر مزید کارروائی نہیں کی جاسکتی ہے۔ تحقیر عدالت کے مقدمہ میں وجئے ملیا کو پہلے ہی جرم کا مرتکب قرار دیا جاچکا ہے۔ قبل ازیں اس اعلیٰ ترین ہدایت کے باوجود وہ سماعت کیلئے حاضر ہونے ناکام ہوگئے تھے۔ انہیں سزاء کے اعلان کے ضمن میں آج عدالت میں حاضر ہونے کی ہدایت بھی کی گئی تھی۔ وجئے ملیا کئی بنکوں سے حاصل کردہ 9000 کروڑ روپئے کے قرض باقی ہیں جس کی بازیابی کیلئے مختلف بینکوں نے اسٹیٹ بینک آف کی قیادت میں مقدمہ دائر کی تھی۔ تحقیر عدالت کے جرم پر 2000 روپئے جرمانہ یا چھ ماہ قید یا پھر دونوں سزائیں دی جاسکتی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT