Thursday , August 17 2017
Home / Top Stories / ترکاری کے عوض موبائل ری چارج

ترکاری کے عوض موبائل ری چارج

گاہک کے موبائل میں انٹرنیٹ سہولت سے ترکاری فروش مستـفید
حیدرآباد۔15نومبر (سیاست نیوز) ترکاری کے عوض موبائیل ریچارج! جی ہاں شہر میں کرنسی کی قلت نے لوگوں کو ایسے بھی دن دکھانے شروع کردیئے ہیں کہ وہ اپنے ترکاری والے کو موبائیل ریچارج کرتے ہوئے ترکاری حاصل کر رہے ہیں۔ حکومت ہند کی جانب سے 1000اور 500کے نوٹ اچانک بند کر دیئے جانے کے بعد پیدا شدہ صورتحال سے نمٹنے کیلئے لوگوں نے مختلف طریقۂ کار اختیار کئے ۔ شہر حیدرآباد کے ایک شہری نے بتایا کہ انہیں اس وقت شدید خفت کا سامنا کرنا پڑا جب انہوں نے ترکاری خریدی اورانہیں ترکاری فروش کو ادا کرنے کیلئے چلر نہیں تھا ۔ وہ اسی تذبذب میں تھے کہ ترکاری فروش نے ان سے سوال کیا کہ آپ کے پاس انٹرنیٹ ہے؟ خریدار حیران ہو گیا اور استفسار کیا کہ کیا کہا؟ تو ترکاری فروش نے دوبارہ سوال دہراتے ہوئے کہا کہ کیا ان کے پاس موبائیل میں انٹرنیٹ ہے؟ اگر وہ موبائیل میں انٹرنیٹ رکھتے ہیں تو وہ 100روپئے کی ترکاری کے عوض موبائیل ریچارج کرواتے ہوئے ترکاری کی قیمت ادا کردیں۔ خریدار ٹھیلہ بنڈی راں کے اس فیصلہ کن سوال سے حیران رہ گیا اور کہا کہ وہ ایسا کرسکتا ہے۔ٹھیلہ بنڈی راں جو ترکاری فروخت کر رہا تھا کے بموجب اس نے فون ریچارج کروانے کی کوشش کی اور کہیں چلر نہ ہونے کے سبب موبائیل فون ریچارج کروانے سے قاصر رہا لیکن جب اس نے ایک نوجوان کو ترکاری خریدتے ہوئے دیکھا تو اس کے ذہن میں یہ بات آئی کہ اس سے ترکاری کی قیمت کے بجائے کیوں نہ ریچارج کروالیا جائے۔ خریدار نے بتایا کہ ترکاری فروش نے 100روپئے کی ترکاری کے عوض موبائیل فون ریچارج کرواتے ہوئے ان کی مشکل آسان کردی لیکن شہر میں کئی لوگ اس طرح کی مشکلات سے دو چار ہیں اس بات کا اندازہ اس سے لگایا جا سکتا ہے کہ ترکاری فروش کو موبائیل ریچارج کا مسئلہ ہے تو دیگر شہریوں کو ترکاری کی خریدی مسئلہ بنی ہوئی ہے۔حکومت نے 1000اور500کی کرنسی نوٹ کو بند کرنے کے بعد جو 2000کی نوٹ جاری کی ہے اس نوٹ کے بعد حالات میں سدھار پیدا نہیں ہوا بلکہ حالات مزید ابتر ہو گئے ہیں جنہیں سدھارنے کیلئے ضروری ہے کہ بازاروں میں 100کے نوٹوں کی وافر مقدار پہنچائی جائے تاکہ شہریوں کے ساتھ تاجرین کو چلر کے حصول میں کوئی دشواریاں باقی نہ رہیں۔

TOPPOPULARRECENT