Saturday , September 23 2017
Home / دنیا / ترکی بغاوت کے ملزمین کو جیل بھیجنے کیلئے موجودہ 38,000 قیدیوں کی رہائی

ترکی بغاوت کے ملزمین کو جیل بھیجنے کیلئے موجودہ 38,000 قیدیوں کی رہائی

انقرہ۔ 17 اگست (سیاست ڈاٹ کام) ترکی میں اب ایک ایسا فتویٰ جاری کیا گیا ہے جس کے تحت 38,000 قیدیوں کی مشروط طور پر رہائی کی راہ ہموار ہوجائے گی جو دراصل ترکی میں ہوئی حالیہ ناکام بغاوت میں ملوث ملزمین کو سزا کے بعد جیل بھیجے جانے کے لئے وہاں (جیل میں) جگہ میں کشادگی کے مقصد کو مدنظر رکھاگیا ہے۔ ایسے ملزمین جنہیں اپنی سزا کے مطابق صرف دو یا اس سے بھی کم سال کاٹنے ہیں، انہیں رہا کردیئے جانے پر غوروخوض کیا جارہا ہے، البتہ گھریلو تشدد، قتل، جنسی جرائم اور ملک سے غداری جیسے جرائم میں ملوث قیدیوں کو رہا نہیں کیا جائے گا۔ وزیر انصاف باقر یوزداق نے اپنے ٹوئٹر پر کہا کہ اس کارروائی کے ذریعہ کم و بیش 38,000 قیدیوں کی جیل سے رہائی ممکن ہوجائے گی۔ انہوں نے یہ وضاحت بھی کی کہ یہ قیدیوں کو معاف کرنے والی بات نہیں ہے بلکہ ان کی مشروط رہائی والا معاملہ ہے۔ یاد رہے کہ 15 جولائی کو ہوئی ناکام فوجی بغاوت کے بعد حکومت ترکی نے تقریباً 35,000 افراد کو حراست میں لیا ہے جن سے پوچھ گچھ کا سلسلہ ہنوز جاری ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT