Monday , August 21 2017
Home / دنیا / ترک امریکی عزیز سانکار کے بشمول تین سائنسدانوں کو کیمسٹری کا نوبل انعام

ترک امریکی عزیز سانکار کے بشمول تین سائنسدانوں کو کیمسٹری کا نوبل انعام

اسٹاکہوم ۔ 7 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) سویڈین کے تھامس لنڈھال، امریکہ کے پال موڈرچ اور ترک نژاد امریکی عزیز سانکار کو متاثرہ ڈی این اے کے خلیوں کو درست کرنے سے متعلق ان کی تحقیق اور کام پر 2015ء کیلئے کیمسٹری کا نوبل انعام دیا گیا ہے۔ نوبل جیوری نے کہا کہ ان تینوں سائنسدانوں نے اپنی تحقیق کے ذریعہ یہ کھوج کرتے ہوئے میڈینس میں ایک نیا کارآمد محاذ کھول دیا کہ انسانی جسم کس طرح ڈی این اے کو درست کرسکتا ہے جو بیماری اور پیرانہ سالی کے سبب متاثر ہوتا ہے۔ نوبل جیوری پیانل نے کہا کہ ’’ان (سائنسدانوں) کے منظم کام نے زندہ خلیوں کی کارکردگی کو سمجھنے میں ایک غیرمعمولی کارنامہ انجام دیا ہے۔ نیز مختلف موروثی امراض کے اسباب کینسر اور پیرانہ سالی کے پس پردہ میکانزم کے بارے میں ٹھوس معلومات فراہم کئے ہیں۔ ڈی آکسی رائبونیوکلیک ایسڈ (ڈی این اے) زندگی کو وجود میں لانے اور اس کو برقرار رکھنے سے متعلق ایک کیمیائی کوڈ ہے۔ جب خلیے تقسیم ہوتے ہیں یہ سالمیانی عمل اس کوڈ پر بالکل درست انداز میں کام کرتا ہے لیکن ان کے کام میں مسلسل خلل و بے ضابطگی دراصل ضمنی خلیے متاثر یا فوت ہوجاتے ہیں۔ سورج کی ضرورت سے زیادہ روشنی یا دیگر ماحولیاتی عناصر بھی ڈی این اے میں بے ضابطگی کا سبب بن سکتے ہیں لیکن اس عمل کی نگرانی کیلئے سالمیاتی درستگی کٹ لحمیات (پروٹین) کا ایک جھنڈ ہوتا ہے جو کوڈ کے اشاروں پر عمل کرتے ہوئے متاثرہ خلیوں کو درست کرتا ہے۔ عزیز سانکار جو ترکی کے علاقہ سابور میں پیدا ہوئے تھے۔ بعد ازاں امریکہ منتقل ہوگئے تھے۔ انہوں نے اپنی تحقیق کے دوران ایک میکانزم کا پتہ چلایا جو ریڈیائی شعاعوں سے متاثر ہونے والے خلیوں کو درست کرنے کیلئے استعمال کیا جاسکتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT