Monday , August 21 2017
Home / دنیا / تشفین ملک نے پاکستان کی دینی درسگاہ میں تعلیم حاصل کی تھی : ٹیچر

تشفین ملک نے پاکستان کی دینی درسگاہ میں تعلیم حاصل کی تھی : ٹیچر

ملتان ۔ 7 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) گذشتہ ہفتہ کیلیفورنیا کے ایک سوشیل سنٹر پر اپنے شوہر کے ساتھ جس خاتون نے 14 افراد کو ہلاک کردیا تھا، پاکستان کے ایک مدرسہ کی ٹیچر کے مطابق اس نے پاکستان کی ایک انتہائی اعلیٰ درجہ کی دینی درسگاہ میں تعلیم حاصل کی تھی۔ 29 سالہ تشفین ملک نے الہدیٰ انسٹیٹیوٹ موقوعہ ملتان میں تعلیم حاصل کی تھی جس کے اغراض و مقاصد میں ان خواتین کو اسلام سے قریب تر کرنا ہے جو دین سے بالکل ناواقف ہیں۔ الہدیٰ کے امریکہ، متحدہ عرب امارات، برطانیہ اور ہندوستان میں بھی دفاتر ہیں۔ ٹیچر سے استفسار کرنے پر اس نے اپنا نام صرف مقدس بتایا اور کہا کہ اس مدرسہ کی انتہاء پسندی سے وابستگی کی کوئی تاریخ نہیں ہے حالانکہ مدرسہ کے نظریات کو یہ کہہ کر کہ طالبان کے نظریات سے متاثر ہیں، نشانہ ضرور بنایا گیا تھا۔ تحقیقات کرنے والوں کو شبہ ہیکہ تشفین نے منگیتر کے ویزہ پر امریکہ کا سفر کیا اور اس نے پاکستان اور سعودی عرب میں بھی کافی وقت گذارا۔ اپنے شوہر کو انتہاء پسند بنانے میں تشفین کا ہی ہاتھ ہے اور اس کی پوری ذمہ داری اسی پر عائد ہوتی ہے۔ بہرحال اس بات کی تحقیقات ہنوز جاری ہے کہ آیا اس کے سعودی اور پاکستان میں دولت اسلامیہ سے کوئی روابط تھے۔

TOPPOPULARRECENT