Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / تشکیل تلنگانہ کے بعد نئی ریاست میں خود کشی کے 1269 واقعات

تشکیل تلنگانہ کے بعد نئی ریاست میں خود کشی کے 1269 واقعات

آندھرا پردیش کے ضلع اننت پور میں گذشتہ تین ہفتوں میں 32 کسانوں کی خود کشی
حیدرآباد ۔ 13 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : آندھرا پردیش کے ضلع اننت پور میں گذشتہ تین ہفتوں میں بتیس کسانوں نے خود کشی کی ۔ نئی ریاست کے قیام کے بعد تلنگانہ میں کسانوں کی خود کشی کے 1269 واقعات کو ریکارڈ کیاگیا ۔ حیدرآباد کے ادارہ سنٹر فار سسٹینبیل ایگریکلچر (CSA) کے مطابق گذشتہ بیس سال میں آندھرا پردیش میں 38 ہزار کسانوں نے خود کشی کی ۔ ماہرین اور پالیسی سازوں نے کہا کہ ان دو ریاستوں میں طویل مدت سے مشکل حالات کا سامنا کررہے ہیں اور کسان قرض کے بوجھ کے باعث خود کشی کا راستہ اختیار کررہے ہیں ۔ موسم خریف کے دوران ان دو ریاستوں میں خشک سالی ایک عام بات ہے ۔ شہر کے ایک ادارہ انٹرنیشنل اگریکلچر ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کے ایک سائنس داں نے کہا کہ یہ محض ایک سال کی بات نہیں ہے بلکہ ہر سال ان دو ریاستوں میں اس طرح کی صورتحال ہوتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ زیادہ تر کسانوں کی خود کشی کا سبب کمرشیل فصلوں کی ناکامی ہوتا ہے آیا کپاس ہو یا گنا یا مکئی ، کسان کپاس اور مکئی پر کافی رقم لگاتا ہے لیکن فصل کم ہونے سے وہ دیوالیہ ہوجاتے ہیں ۔ تلنگانہ کے اضلاع میدک ، ورنگل ، کریم نگر ، عادل آباد اور نلگنڈہ میں جہاں وسیع رقبہ پر کپاس کی کاشت کی جاتی ہے بری طرح متاثر ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT