Saturday , October 21 2017
Home / شہر کی خبریں / تعلیمی خدمات کی انجام دہی پر اظہار خوشنودی : جناب زاہد علی خاں

تعلیمی خدمات کی انجام دہی پر اظہار خوشنودی : جناب زاہد علی خاں

ایکٹیو کڈس مشن اسکول کا سالانہ جلسہ، ایڈیٹر سیاست کو یادگار مرر ایوارڈ کے پورٹریٹ کی پیشکشی
حیدرآباد ۔ 16 ۔ مارچ : ( پریس نوٹ ) : بروز منگل 14 مارچ ابراہیم فنکشن ہال چنچل گوڑہ میں منعقدہ جلسہ کے مہمان خصوصی جناب زاہد علی خاں کی سرپرستی میں قرات کلام پاک اور قصیدہ بردہ شریف محترمہ شیرین فاطمہ نے پڑھا ۔ مہمانان اعزازی میں جناب صوفی شاہ مظفر علی چشتی ، جناب سید عظمت اللہ آئی اے ایس ریٹائرڈ ڈائرکٹر آف انڈسٹریز حکومت آندھرا پردیش و چیرمین خاک طیبہ ٹرسٹ جدہ ، جناب امجد اللہ خاں خالد ترجمان ایم بی ٹی ، جناب ایس کے افضل الدین سکریٹری تلنگانہ کانگریس کمیٹی ، پروفیسر مجید بیدار ، پروفیسر رحمت یوسف زئی اور جناب سید خواجہ معین الدین اور جناب جاوید کمال بھی موجود تھے ۔ جلسہ کی ابتدائی کارروائی ڈرامہ ڈائرکٹر جناب جاوید کمال نے چلائی ۔ جناب سعید حسین کرسپانڈنٹ نے جناب زاہد علی خاں کی خدمت میں یادگار مسلم مرر ایوارڈ کا پورٹریٹ پیش کیا لیکن اس سے پہلے انہوں نے اس پورٹریٹ کے پیچھے جو کہانی ہے اس کا تفصیل سے تعارف پیش کیا ۔ جن میں زبیر احمد جو آن لائن نیوز پیپر کو دلی کے کرتا دھرتا اور ان کا تعارف پیش کیا ۔ جن کے ہاتھوں یہ ایوارڈ دیا گیا ۔ یعنی جناب فخر الاسلام ہندوستانی نژاد امریکی بزنسمین جناب فخر الاسلام ( فرینک اسلام ) جو بارک اوباما کے فینانشیل اڈوائزر اور دوست کا تفصیل سے تعارف پیش کیا گیا ۔ آخر میں جناب زاہد علی خاں اور سیاست کی ستر سالہ تاریخ کی تفصیلات پیش کی گئی ۔ جناب زاہد علی خاں نے مسرت کا اظہار کرتے ہوئے روزنامہ سیاست کی جانب سے مختلف اسکیمات کا ذکر کیا ۔ جن میں دوبدو پروگرام ، انگلش اسپوکن کلاسیس ، لاوارث لاشوں کی تدفین ، ضرورت مندوں ، بیواؤں کی وقتا فوقتا امداد خاص طور پر سلویٰ فاطمہ کی پائلٹ ٹریننگ کے لیے 35 لاکھ روپئے سے جو مدد کی گئی اور IIIT میں داخلہ کے لیے 2 طلباء کی امداد کا ذکر کیا اور کہا کہ تعلیم کے معاملہ میں جو لوگ اپنے اپنے طور پر کام کررہے ہیں اس سے میں بہت خوش ہوتا ہوں ۔ ایسے پروگراموں میں بڑے شوق سے شرکت کرتا ہوں اور ان تمام اداروں کے کام کے لیے ان کی سرپرستی اور ہمت افزائی کرتا ہوں ۔ امجد اللہ خاں خالد نے اپنی تقریر میں بارکس کے ایک طالب علم کا ذکر کیا جس نے اپنی محنت اور لگن کی وجہ سے ناسا میں ملازمت حاصل کی ۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ جس طرح جناب زاہد علی خاں ایسے تعلیمی اداروں سے خوش ہوتے ہیں میں بھی ان کے اس خیال کی تائید کرتا ہوں ۔ اس کے بعد نونہالوں نے انتہائی شاندار اور منظم طریقہ سے اپنے فن کا مظاہرہ کیا جو سرپرست اور مہمانان اعزازی نے بہت پسند کیا ۔ جو مہمان جلد جانا چاہتے تھے جب ان حضرات نے بچوں کی کارکردگی کا مشاہدہ کیا تو پروگرام ختم ہونے تک وہ خوشی کے ساتھ بیٹھے رہے ۔ طلباء اور اساتذہ میں ان کی کارکردگی کی بناء پر ایوارڈز ، ٹرافیز اور گفٹس سعید حسین ، پروفیسر رحمت یوسف زئی ، ایس کے افضل الدین اور خواجہ معین کے ہاتھوں تقسیم کئے گئے ۔ خاص طور پر اسکول کرسپانڈنٹ ، ثمینہ بانو جنہوں نے اینکرینگ کے فرائض بڑی عمدگی سے ادا کئے ۔ شبانہ فاطمہ ، صفا اکبر اور شیرین فاطمہ کا خاص طور پر شکریہ ادا کیا گیا کیوں کہ ان اساتذہ کی مسلسل محنت اور کاوشوں کی وجہ سے یہ پروگرام پیش کیا گیا ۔ عائشہ حمیرہ کو بیسٹ اسٹوڈنٹ آف دی ایر کا ایوارڈ دیا گیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT