Friday , September 22 2017
Home / Top Stories / تعلیمی سال 2018-19 ء سے نیٹ کا اردو میں بھی انعقاد

تعلیمی سال 2018-19 ء سے نیٹ کا اردو میں بھی انعقاد

مرکز کو سپریم کورٹ کا حکم ، ایس آئی او کا حلف نامہ
نئی دہلی ۔ /13 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے آج مرکز کو یہ حکم دیا ہے کہ میڈیکل کورسیس میں داخلوں کیلئے منعقد ہونے والے امتحان نیٹ میں تعلیمی سال 2018-19 ء سے اردو کو بھی ایک زبان کے طور پر شامل کرے ۔ عدالت نے واضح کیا کہ وہ حکومت کو ایسی ہدایت نہیں دے سکتی کہ کسی بھی طرح ’’کرشمہ‘‘ دکھاتے ہوئے جاریہ سال کے نیٹ امتحان میں اردو کو بھی بطور زبان شامل کرے ۔ جسٹس دیپک مشرا کی زیرقیادت بنچ نے درخواست گذار کی جانب سے پیش ہونے والے وکیل کو بتایا کہ بہرصورت اس سال اردو کو شامل کرنے کا امکان نہیں ہے ۔ اس میں کئی مشکلات درپیش ہیں ۔ آپ اس حقیقت کو سمجھنے کی کوشش کریں کہ ہم حکومت کو کرشمہ کردکھانے کیلئے نہیں کہہ سکتے ۔ یہ امتحان /7 مئی کو منعقد شدنی ہے اور آج /13 اپریل ہے ۔ اس کے لئے کافی طویل مراحل سے گزرنا ہوتا ہے ۔ اس بنچ میں جسٹس اے ایم کھنولکر اور جسٹس ایم ایم شانتا ناگودار بھی شامل ہیں ۔ بنچ نے بتایا کہ ہم مرکزی حکومت کو یہ ہدایت دیتے ہیں کہ تعلیمی سال 2018-19 ء سے نیٹ امتحان میں اردو کو بطور زبان شامل کریں ۔ سالیسٹر جنرل رنجیت کمار نے مرکز کی جانب سے پیش ہوتے ہوئے عدالت کو بتایا کہ 2018-19 ء سے اردو میڈیم میں نیٹ امتحان منعقد کرنے کی تجویز کے ہم مخالف نہیں ہے ۔ لیکن اس سال وقت کی کمی کے باعث ایسا ممکن نہیں ۔ عدالت ایک درخواست کی سماعت کررہی تھی جس میں مرکز کو نیٹ 2017 ء اردو میڈیم میں بھی منعقد کرنے کا حکم دینے کی خواہش کی گئی تھی ۔ اسٹوڈنٹس اسلامک آرگنائزیشن آف انڈیا (ایس آئی او) نے اپنے قومی سکریٹری توصیف احمد کے ذریعہ عدالت میں حلف نامہ داخل کیا ۔ سماعت کے دوران درخواست گذار کی نمائندگی کررہے وکیل نے بتایا کہ اردو میڈیم طلبا ء کی تعداد 11 ہزار ہے اور نیٹ امتحان مہاراشٹرا میں صرف 500 مراٹھی طلباء کیلئے منعقد ہوسکتا ہے تو پھر اتنی کثیر تعداد میں اردو طلباء ہونے کے باوجود اردو میں یہ امتحان کیوں منعقد نہیں کیا جاسکتا ۔ سی بی ایس ای کی جانب سے پیش ہونے والے وکیل نے بنچ کو بتایا کہ جاریہ سال /7 مئی کو نیٹ امتحان کے پیش نظر اردو زبان کو فوری طور پر شامل کرنا ممکن نہیں ۔ واضح رہے کہ اس وقت نیٹ 10 زبانوں میں منعقد کیا جارہا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT