Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / تعمیرات و اراضیات کو باقاعدہ بنانے کی اسکیم میں توسیع

تعمیرات و اراضیات کو باقاعدہ بنانے کی اسکیم میں توسیع

31 دسمبر آخری تاریخ ، آن لائن ادخال دستاویزات میں مشکلات کا سامنا
حیدرآباد۔ 25 ۔ ڈسمبر ( سیاست نیوز) حکومت کی جانب سے تعمیرات و اراضیات کو باقاعدہ بنانے کیلئے شروع کردہ اسکیم بی آر ایس اور ایل آر ایس کیلئے درخواستوں کے ادخال کی آخری تاریخ 31 ڈسمبر میں کوئی توسیع نہیں کی گئی ہے لیکن بعض دستاویزات کی عدم موجودگی کے سبب آن لائین درخواستوں کے ادخال میں پیش آرہی مشکلات کو دور کرنے کیلئے مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد نے ای سی ، مارکٹ وائلیو سرٹیفکٹ اور بانڈ منسلک کرنے کے لزوم کو 27 ڈسمبر تک تعطیلات کی وجہ سے برخواست کردیا ہے اور 31 ڈسمبر سے قبل ان دستاویزات کے ادخال کو یقینی بنانے کی ہدایت جاری کی گئی ہے۔ بی آر ایس اور ایل آر ایس کیلئے داخل کی جانے والی درخواستوں کی یکسوئی حیدرآباد ہائی کورٹ میں جاری مقدمہ کے فیصلہ پر منحصر ہوگی جوکہ عدالت العالیہ نے بی آر ایس ، ایل آر ایس اسکیم پر حکم التواء جاری کر رکھا ہے اور اس بات کی ہدایت دی گئی ہے کہ آئندہ سماعت و احکام تک کسی قسم کا فیصلہ نہ لیا جائے بلکہ 31 ڈسمبر تک جو درخواستوں کی وصولی کا عمل اسے مکمل کرلیا جائے ۔ بی آر ایس یا ایل آر ایس اسکیم سے استفادہ کیلئے 13 دستاویزات بشمول ابتدائی ادائیگی شامل ہے لیکن 4 روز مسلسل تعطیل کے باعث بعض دستاویزات کا حصول دشوار ہے، اسی لئے ان دستاویزات کے بعد ازاں ادخال سہولت فراہم کی گئی ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ تاحال جی ایچ ایم سی کو 26,628 بی آر ایس کی درخواستیں موصول ہوئی ہیں جبکہ ایل آر ایس کے تحت 11843 درخواستیں داخل کئے جانے کی اطلاعات ہیں۔ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد نے درخواستوں کے ساتھ جن دستاویزات کا لزوم عائد کیا ہے ، ان میں بلڈنگ پلان ، جگہ ، تفصیلی پلان کے علاوہ لائسنس یافتہ ٹیکنیکل عہدیدار سے درخواست پر دستخط اور عمارت کے ساتھ چھت کی تصویر پیش کرنے کی ہدایت دی ہے۔ سرکاری تعطیلات کے باعث بعض دستاویزات کے حصول میں ہونے والی دشواریوں پر معمولی راحت فراہم کی گئی ہے لیکن آخری تاریخ میں کوئی توسیع نہیں کی گئی۔

TOPPOPULARRECENT