Sunday , April 30 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ آبپاشی پراجکٹس کی تعمیر میں کانگریس کی رکاوٹ کی کوشش

تلنگانہ آبپاشی پراجکٹس کی تعمیر میں کانگریس کی رکاوٹ کی کوشش

ریاست کی ترقی میں رکاوٹ کے مترادف ، ٹی آر ایس ایم پی بی سمن کا بیان
حیدرآباد ۔ 10فبروری ( سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹرا سمیتی نے الزام عائد کیا کہ کانگریس پارٹی ریاست کے آبپاشی پراجکٹس کی تعمیر میں رکاوٹ پیدا کرنے کی کوشش کررہی ہے ۔ اس طرح کا کوئی بھی قدم ریاست کی ترقی میں رکاوٹ کے مترادف ہے ۔ ٹی آر ایس رکن پارلیمنٹ بی سمن نے ارکان قانون ساز کونسل این لکشمن راؤ اور راملو نائک کے ساتھ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس قائدین کو کسانوں اور آبپاشی پراجکٹس کے بارے میں بات کرنے کا کوئی حق نہیں ہے ۔ کانگریس کے 10سالہ دورحکومت میں زرعی شعبہ کو مکمل طور پر نظراندازکردیا گیا ۔ اس کے علاوہ کسانوں کے مسائل پر کوئی توجہ نہیں دی گئی جس کے نتیجہ میں ہزاروں کسانوں نے خودکشی کرلی ۔ سمن نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی قیادت میں آبپاشی پراجکٹس کی مقرر وقت پر تکمیل کا عہد کرچکی ہے ۔ کوئی بھی طاقت پراجکٹس کی راہ میں رکاوٹ نہیں بن سکتی ۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں ایک کروڑ ایکر اراضی کو سیراب کرنے کے نشانہ کے ساتھ پراجکٹوں کی تعمیر کا آغاز کیا گیا ‘ جن کی تکمیل سے نہ صرف زرعی شعبہ خوشحال ہوگا بلکہ سنہرے تلنگانہ کی تشکیل کی سمت پیشرفت ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر کسانوں کے چہرے پر خوشی اور ان کے گھروں میں خوشحالی دیکھنا چاہتے ہیں لیکن ایسا محسوس ہوتا ہے کہ اپوزیشن جماعتوں کو اس سے دلچسپی نہیں اور وہ مختلف انداز سے رکاوٹیں کھڑی کرنا چاہتے ہیں ۔ رکن پارلیمنٹ نے پراجکٹس کی تعمیر میں بے قاعدگیوں کے الزامات کو مسترد کردیا اور کہا کہ بے قاعدگیاں دراصل کانگریس کی پہچان ہیں ‘ کانگریس دور حکومت میں ہر اسکیم اور پراجکٹ میں بڑے پیمانے پر بے قاعدگیاں کی گئی اور سرکاری خزانے کو لوٹا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت نہ صرف زیرالتواء پراجکٹس کی تکمیل کرے گی بلکہ نئے پراجکٹس کو بھی مقررہ مدت میں مکمل کیا جائے گا ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT