Thursday , August 17 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ آر ٹی سی 2200 کروڑ روپیوں کے خسارہ سے دوچار

تلنگانہ آر ٹی سی 2200 کروڑ روپیوں کے خسارہ سے دوچار

ریاست کے ہر موضع تک بس چلانے کا عزم ، چیرمین کارپوریشن ایس ستیہ نارائنا
حیدرآباد ۔ 19 ۔ مئی : ( سیاست نیوز ) : صدر نشین تلنگانہ اسٹیٹ روڈ ٹرانسپورٹ کارپوریشن مسٹر ایس ستیہ نارائنا نے کہا کہ تلنگانہ کے ہر موضع تک آر ٹی سی بس پہونچنے اور دیہی عوام کو بہتر سفر کی سہولتوں کو یقینی بنانے کے لیے حکومت تلنگانہ موثر اقدامات کررہی ہے ۔ لہذا آر ٹی سی کو نفع بخش بنانے کے لیے آر ٹی سی ملازمین اور ورکرس کے ساتھ ڈپوز اسٹاف سے ممکنہ کوشش کرنے کی صدرنشین نے پر زور خواہش کی ۔ انہوں نے اس بات کا انکشاف کیا کہ آر ٹی سی 2200 کروڑ روپیوں کے خسارے سے دوچار ہے اور ہر سال اس خسارہ میں اضافہ ہی ہوتا جارہا ہے ۔ لہذا آر ٹی سی کو ہونے والے خسارہ کا مستقل طور پر تدارک کرنے کی ضرورت پر زور دیا ۔ صدر نشین ٹی ایس آر ٹی سی مسٹر ستیہ نارائنا جنہوں نے آج ٹی ایس آر ٹی سی کے زونل ورکشاپ کے ساتھ ساتھ اوپل آر ٹی سی بس ڈپو کا اچانک معائنہ کیا تھا ۔ ملازمین آر ٹی سی اور ورکرس سے ملاقات کر کے مکمل تفصیلات سے واقفیت حاصل کی تھیں اس امید کا اظہار کیا کہ ٹی ایس آر ٹی سی کو نقصانات سے بچانے اور نفع بخش بنانے میں تمام ملازمین سوپر وائزرس اور عہدیداروں کا مکمل تعاون حاصل رہے گا ۔ انہوں نے آر ٹی سی زونل ورکشاپ کے ملازمین ، عہدیداروں اور سپروائزرس کی شاندار کارکردگی پر زبردست ستائش کا اظہار کیا اور کہا کہ اوپل بس ڈپو کی یومیہ آمدنی 12 لاکھ روپئے ضرور ہے لیکن اس کے باوجود اوپل بس ڈپو بھی نقصانات سے دوچار ہے ۔ لہذا اوپل بس ڈپو کو ہونے والے نقصانات سے بچانے کے لیے روزانہ مزید 25 لاکھ روپئے کی آمدنی میں اضافہ کر کے اس ڈپو کو نقصانات سے پاک بنانے کی ضرورت پر زور دیا ۔ اس موقع پر صدر نشین ٹی ایس آر ٹی سی مسٹر ستیہ نارائنا کے ہمراہ مسرس ایم رویندر ایکزیکٹیو ڈائرکٹر و سکریٹری ٹی ایس آر ٹی سی پرشوتم نائک ، ایکزیکٹیو ڈائرکٹر ، آئی ٹی اینڈ جی ایچ زیڈ ، ناگا راجو ایکزیکٹیو ڈائرکٹر ، وینو ریجنل منیجر میدک اور ایس نائک ورکس منیجر زونل ورکشاپ اوپل وغیرہ بھی شریک تھے ۔۔

TOPPOPULARRECENT