Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ بجٹ کی تشکیل سے قبل ریاست کی آمدنی میں اضافہ خوش آئند

تلنگانہ بجٹ کی تشکیل سے قبل ریاست کی آمدنی میں اضافہ خوش آئند

آمدنی والے محکمہ جات پر خصوصی توجہ ، کمرشیل ٹیکس کا نشانہ 80 فیصد مکمل
حیدرآباد۔19فبروری ( سیاست نیوز ) تلنگانہ کے بجٹ برائے 2016-17ء کی تشکیل سے قبل حکومت کی آمدنی میں اضافہ ہوا ہے ۔ ریاست کی موجودہ معاشی صورتحال کے پس منظر میں اس اضافہ کو خوش آئند قرار دیا جارہا ہے ۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ سرکاری خزانہ میں اضافہ کیلئے اہم محکمہ جات کی آمدنی میں جاریہ سال اضافہ ہوا ہے ۔ محکمہ کمرشیل ٹیکسیس ‘ اسٹامپ اینڈ رجسٹریشن اور اکسائز کی آمدنی میں قابل لحاظ اضافہ ہوا جس سے حکومت کو آئندہ سال بجٹ کی تیاری میں مدد ملے گی ۔ جن محکمہ جات سے آمدنی میں اضافہ کی گنجائش ہے اُن پر خصوصی توجہ دی جاسکتی ہے ۔ ذرائع نے بتایا کہ کمرشیل ٹیکسیس کی آمدنی میں 16فیصد ‘ رجسٹریشن و اسٹامپ کی آمدنی میں 25فیصد اور اکسائز کی آمدنی میں 20فیصد کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے ۔ جن محکمہ جات کو حکومت آمدنی کا اہم ذریعہ تصور کرتی ہے اُن میں محکمہ کمرشیل ٹیکسیس اپنی آمدنی کے اضافہ کے ذریعہ دیگر محکمہ جات سے سرفہرست ہے ۔ محکمہ کمرشیل ٹیکس کے عہدیداروں نے آمدنی میں اضافہ کیلئے حالیہ عرصہ میں جس خصوصی مہم کا آغاز کیا تھا اس کے مثبت نتائج برآمد ہوئے ہیں ۔ ویاٹ ‘ سی ایس ٹی اور دیگر ٹیکسیس کی وصولی کیلئے خصوصی مہم چلائی گئی تھی ۔ اس محکمہ کو مختلف ٹیکسیس سے ہر ماہ مزید 300 کروڑ کی آمدنی میں اضافہ کا امکان ہے ۔ عہدیداروں کا کہنا ہے کہ ٹیکس نادہندگان کے خلاف کارروائی سے آمدنی میں اضافہ ہوا ہے ۔ حکومت محکمہ اکسائز سے سالانہ 36,906 کروڑ کی آمدنی کا نشانہ رکھتی ہے ۔ محکمہ کمرشیل ٹیکسیس نے جو نشانہ مقرر کیا تھا اس کی 80فیصد تک تکمیل ہوئی ہے ۔ ریاستی حکومت مذکورہ محکمہ جات کی آمدنی میں اضافہ سے مطمئن ہے اور وہ مستقبل میں مزید اضافہ کیلئے اقدامات کرے گی ۔

TOPPOPULARRECENT