Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / تلنگانہ بھی معاشی امداد کیلئے مرکز سے رجوع

تلنگانہ بھی معاشی امداد کیلئے مرکز سے رجوع

مشن بھاگیرتا ‘ مشن کاکتیہ و پسماندہ اضلاع کیلئے رقم کا مطالبہ‘ کے ٹی آر کی جیٹلی سے ملاقات
حیدرآباد 8 ستمبر (سیاست نیوز) وزیر آئی ٹی و بلدی نظم و نسق کے ٹی آر نے آج شام دہلی میں مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی سے ملاقات کرکے تلنگانہ میں مشن بھاگیرتا اور مشن کاکتیہ کیلئے 24,500 کروڑ روپئے ‘پسماندہ اضلاع کو پانچ سال تک سالانہ فی کس 50 کروڑ روپئے جاری کرنے اور صنعتوں کے قیام کیلئے ٹیکس میں استثنٰی دینے کا مطالبہ کیا۔ تقسیم ریاست بل کے تحت آندھرا پردیش کو فنڈز جاری کرنے اور تلنگانہ کو نظرانداز کرنے پر اس کا عوام میں غلط پیغام پہونچنے کا مرکزی وزیر کو اشارہ دیا ۔ آندھرا پردیش کو پیاکیج کا اعلان ہوتے ہی وزیر آئی ٹی کے ٹی آر آج دہلی پہونچ گئے اور وزیر فینانس سے ملاقات کرکے تقسیم ریاست بل میں تلنگانہ سے وعدوں پر عمل آوری کے مطالبہ پر یادداشت پیش کی۔ بعدازاں میڈیا سے کے ٹی آر نے کہا کہ متحدہ آندھرا میں ناانصافی پر تلنگانہ پسماندگی کا شکار ہوئی ہے۔ تلنگانہ کی ترقی مسائل کی یکسوئی کیلئے علیحدہ تلنگانہ کی تحریک چلا کر ریاست حاصل کرچکے ہیں۔ تلنگانہ کی ترقی کیلئے مرکزی حکومت تعاون کرے۔ ریاست کی تقسیم کے موقع پر سوائے حیدرآباد کے تلنگانہ کے 9 اضلاع پسماندہ ہونے کی مرکز نے نشاندہی کی تھی۔ تقسیم آندھرا بل میں تلنگانہ سے جو وعدے کئے گئے ، ان کو پورا کرنا مرکز کا فریضہ ہے۔ مشن کاکتیہ ومشن بھاگیرتا کی نیتی آیوگ نے ستائش کی ہے۔ ان پراجیکٹس کی عاجلانہ تکمیل کیلئے 24,500 کروڑ روپئے جاری کرنے ریاستی حکومت نے جو تجویز پیش کی ہے، ہنوز وہ زیرغور ہے۔ فنڈز کی جلد اجرائی سے تلنگانہ میں پینے کے پانی کا مسئلہ حل ہوجائیگا۔ تلنگانہ کے 9 پسماندہ اضلاع کو ترقی دینے ہر سال 50 کروڑ روپئے آئندہ پانچ سال تک جاری کئے جائیں۔ حیدرآباد، ورنگل اور حیدرآباد ناگپور تک صنعتی راہداری قائم کرنے صنعتوں کے قیام میں ٹیکس استثنیٰ دیتے ہوئے ترقی میں تعاون کرنے کا مطالبہ کیا ۔ انہوں نے کہا کہ مرکز کی جانب سے آندھرا کو مالی پیاکیج پر تلنگانہ کو اعتراض نہیں ہے، تاہم ترقی کیلئے جس طرح آندھرا کی مدد کی جارہی ہے، تلنگانہ سے بھی مرکزتعاون کرے ۔ بصورت دیگر عوام میں منفی پیغام پہونچے گا۔ تلنگانہ میں صنعتوں کے قیام کیلئے بیرونی ممالک سے قرضوں کے حصول میں مرکز تعاون کرے ۔ ریاستی وزیر نے کہا کہ ارون جیٹلی نے تقسیم بل میں تلنگانہ سے جو بھی وعدے کئے گئے، انہیں پورا کرنے کا یقین دلایا ہے۔

TOPPOPULARRECENT