Friday , March 31 2017
Home / Top Stories / تلنگانہ جیلوں میں قیدیوں کی شرح اموات میں کمی

تلنگانہ جیلوں میں قیدیوں کی شرح اموات میں کمی

علاج معالجہ کی بہتر سہولتیں، سگریٹ نوشی پر مکمل پابندی
حیدرآباد ۔ 26 نومبر (سیاست نیوز) تلنگانہ کی جیلوں میں قیدیوں کی اموات کی تعداد گذشتہ چند برسوں میں ہوئی اموات کی بہ نسبت نصف سے بھی کم ہوگئی ہیں۔ سینئر عہدیداروں کا کہناہیکہ قیدیوں کے علاج معالجہ کی سہولتوں کو بہتر بنانے کی وجہ سے شرح اموات کم ہوئی ہیں۔ ڈائرکٹر جنرل محابس وی کے سنگھ نے کہاکہ جیلوںمیں سال 2016ء کے دوران صرف 19 اموات ہوئی ہیں جبکہ سال 2013ء میں 53، سال 2014ء میں 56، سال 2015ء میں 32 قیدیوں کی موت ہوئی تھی۔ گذشتہ 3 برسوں میں خودکشی سے قیدیوں کی صرف 3 اموات ہوئی ہیں۔ اب ہر نئے قیدی کو سات روزہ ماسٹر ہیلت چیک اپ سے گذرنا پڑتا ہے۔ اس طرح اس کی صحت معلوم کی جاسکتی ہے۔ وی کے سنگھ نے کہا کہ سابق میں قیدیوں کے علاج معالجہ کیلئے فنڈس مسئلہ تھے جس کی وجہ سے قیدیوں کی شرح اموات زیادہ ہیں۔ اب دواخانوں میں قیدیوں کے علاج معالجہ کیلئے ہونے والے اخراجات کی پابجائی کیلئے فنڈ موجود ہے۔ محکمہ جیل کی طرف سے قائم کئے گئے پٹرول پمپس سے صرف اس ایک سال میں 3 کروڑ روپئے جمع ہوئے۔ قیدیوں کی شرح اموات میں کمی کی ایک اور بڑی وجہ سگریٹ نوشی پر مکمل امتناع ہے۔ تمام جیلوں میں قیدیوں کی سگریٹ نوشی پر مکمل پابندی ہے۔ یہ پابندی دیڑھ سال قبل لگائی۔ اس سے قبل قیدی کینٹین سے سگریٹ خریدتے تھے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT