Wednesday , June 28 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ راشٹرا سمیتی کو سیاسی بحران کا احساس

تلنگانہ راشٹرا سمیتی کو سیاسی بحران کا احساس

بحران پر قابو پانے ’ واستو ‘ کا سہارا لینے کوشاں ، 27 اپریل کو جلسہ عام کا اعلان
حیدرآباد۔21اپریل (سیاست نیوز) تلنگانہ راشٹر سمیتی ریاست میں سیاسی بحران کو محسوس کرنے لگی ہے اور اس بحران سے نکلنے کیلئے ’واستو‘ کا سہارا لینے کوشاں ہے! ریاست تلنگانہ میں برسر اقتدار جماعت کی جانب سے 27اپریل کو منعقد ہونے والے جلسہ کے مقام کے انتخاب کے متعلق کہا جا رہا ہے کہ چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے ریاست میں سیاسی بحران کے خاتمہ کیلئے کوشاں ہیں اور اسی لئے انہوں نے ایسے مقام کا انتخاب کیا ہے جو تلنگانہ راشٹر سمیتی کیلئے بہتر سمجھاجاتا ہے۔ ٹی آر ایس کے فروغ میں ہنمکنڈہ کے علاقہ پرکاش ریڈی پیٹ کو کے سی آر پارٹی کے لئے انتہائی اہم تصور کرتے ہیں کیونکہ سابق میں اس علاقہ میں ہونے والے جلسہ عام نے تلنگانہ راشٹر سمیتی کو کافی مقبولیت سے ہمکنار کیا ہے۔ریاست کے بیشتر علاقو ں میں کافی سہولتوں کی موجودگی کے باوجود چیف منسٹر کی جانب سے پرکاش ریڈی پیٹ کے انتخاب کے متعلق یہ کہا جا رہا ہے کہ چیف منسٹر اس بحران کی صورتحال سے نمٹنے کیلئے دوبارہ اسی مقام پر جلسہ عام منعقد کرنے جا رہے ہیں جس علاقہ سے تلنگانہ راشٹر سمیتی نے ’سمہا گرجنا‘ کے ذریعہ تحریک میں شدت پیدا کی تھی اور 2003میں اس جلسہ عام کی زبردست کامیابی کے بعد ٹی آر ایس کے ایک طاقت کی شکل میں ابھرنے کے بعد 2004 میں کانگریس کے ساتھ اقتدار کا حصہ بننے سے قبل کئے گئے جلسہ عام کا بھی حوالہ دیا جا نے لگا ہے۔اسی طرح 2010میں صدرنشین یو پی اے مسز سونیا گاندھی کی جانب سے تشکیل تلنگانہ کے وعدہ کو پورا کرنے میں کی جانے والی تاخیر پر کے سی آر نے اسی مقام سے جدوجہد کا آغاز کیا تھا اور 2014میں انہیں کامیابی حاصل ہوئی ۔ان مثالوں کی بنیاد پر ٹی آر ایس کے واستو کو پرکاش ریڈی پیٹ کو بہترین قرار دیا جانے لگا ہے اور کہا جا رہا ہے کہ چیف منسٹر کے واستو پر یقین کے کئی جواز موجود ہیں اور ان کی بنیاد پر ہی وہ اسے کافی اہمیت دینے لگے ہیں۔تلنگانہ راشٹر سمیتی قائدین کا کہنا ہے کہ ہنمکنڈہ کا علاقہ پرکاش ریڈی پیٹ کا جلسہ عام ٹی آر ایس کے لئے ہر مرتبہ بہتر ثابت ہوا ہے اور اسی بنیاد پر یہ کہا جا رہا ہے کہ ریاست میں جاری سیاسی بحران کی صورتحال سے نمٹنے کیلئے صدر پارٹی مسٹر کے سی آر نے اگلے جلسہ عام کو بھی اسی مقام پر منعقد کرنے کا فیصلہ کیا ہے جو ان کے اور ان کی پارٹی کیلئے متعدد مرتبہ بہتر ثابت ہوتا آیا ہے۔اپوزیشن قائدین نے چیف منسٹر کی جانب سے دوبارہ اسی مقام کے انتخاب اور واستو کے حوالہ دیئے جانے پر حیرت کا اظہار کرتے ہوئے یہ ادعا کررہے ہیں کہ چیف منسٹر اپنی پارٹی میں پیدا ہورہے بحران کو محسوس کرنے لگے ہیں اور اس صورتحال پر قابو پانے کی کوشش کیلئے ہی واستو کے مطابق جلسہ منعقد کرتے ہوئے بحران کو ختم کرنے کی کوشش کر رہے ہیں لیکن وہ ایسا نہیں کرپائیں گے کیونکہ مسٹر کے سی آر اس بات کو فراموش کر رہے ہیںکہ ریاست تلنگانہ کے عوام کی جانب سے شروع ہونے والی تحریک کو عوام نے چلایا جس کے سبب انہیں بھاری کامیابی حاصل ہوئی اور اب وہ خود اس عوامی تحریک کی کامیابی کا سہرا واستو کے سر باندھنے کی کوشش کر رہے ہیں۔اس بات سے سب واقف ہیں کہ مسٹر کے سی آر کو واستو پرکافی یقین ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT