Monday , September 25 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں بی جے پی کا تنہا انتخابی مقابلہ

تلنگانہ میں بی جے پی کا تنہا انتخابی مقابلہ

آندھرا میں تلگودیشم سے مفاہمت ‘ امیت شاہ کی وضاحت
حیدرآباد ۔ 26 ۔ اگست : ( سیاست نیوز ) : ریاست تلنگانہ میں بی جے پی آئندہ انتخابات میں تنہا مقابلہ کرے گی اور کسی سیاسی جماعت سے راست یا بالواسطہ انتخابی مفاہمت نہیں کرے گی ۔ تاہم ریاست آندھرا پردیش میں تلگو دیشم کے ساتھ بی جے پی کی مفاہمت برقرار و جاری رہیگی ۔ صدر بی جے پی مسٹر امیت شاہ نے اس بات کا انکشاف کیا اور بتایا چونکہ آندھرا پردیش میں تلگو دیشم سے بی جے پی کے بہت اچھے و خوشگوار تعلقات ہیں لہذا نئی جماعتوں کے ساتھ مفاہت سے متعلق تذکرہ کی کوئی ضرورت نہیں ہے ۔ انہوں نے وائی ایس آر کانگریس کی آندھرا پردیش میں بی جے پی سے انتخابی مفاہمت سے متعلق بعض اطلاعات پر اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے یہ ریمارکس کیے ۔ انہوں نے اس طرح کی اطلاعات کو مسترد کرتے ہوئے ان خبروں کی سخت مذمت بھی کی ۔ اسی دوران سابق مرکزی وزیر و قائد بی جے پی شریمتی ڈی پورندیشوری نے بی جے پی اور وائی ایس آر کانگریس کے مابین مفاہمت سے متعلق اطلاعات کی تشہیر کو پر غلط و بے بنیاد قرار دیتے ہوئے مسترد کردیا ۔ انہوں نے کہا کہ آندھرا پردیش میں اور مرکز میں تلگو دیشم کے ساتھ مل کر کام انجام دیا جارہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وہی مفاہمت و دوستی جاری و برقرار رہے گی ۔ انہوں نے کہا کہ مفاہمت کے تعلق سے مرکزی قیادت غور کرتی ہے کسی کے کچھ کہنے سے بی جے پی کے ساتھ مفاہمت ممکن نہیں ہوگی ۔ پورندیشوری نے کہا کہ فی الوقت جگن موہن ریڈی کو بی جے پی کے ساتھ ملانے یا مفاہمت کا کوئی ارادہ نہیں ہے ۔ قائد بی جے پی جنہوں نے کاکناڈا میونسپل کارپوریشن انتخابات کے سلسلہ میں انتخابی مہم میں حصہ لینے کے لیے کاکناڈا کا دورہ کیا تھا ۔ اخباری نمائندوں سے غیر رسمی بات چیت کے دوران مختلف سوالات کے جواب دیتے ہوئے کہا کہ وائی ایس آر کانگریس پارٹی اور بی جے پی کے مابین کوئی انتخابی مفاہمت یا دوستی ہرگز نہیں رہے گی ۔

TOPPOPULARRECENT