Friday , August 18 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں تمام طبقات کی ترقی پر چیف منسٹر کے سنجیدہ اقدامات

تلنگانہ میں تمام طبقات کی ترقی پر چیف منسٹر کے سنجیدہ اقدامات

اپوزیشن کی پسماندہ طبقات کے ساتھ زبانی ہمدردی، وزیرسمکیات سرینواس یادو کا بیان
حیدرآباد۔/11فبروری، ( سیاست نیوز) وزیر سمکیات سرینواس یادو نے کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کمزور طبقات کی ترقی کیلئے سنجیدہ اقدامات کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ درج فہرست اقوام، قبائل اور پسماندہ طبقات کی ترقی کیلئے تلنگانہ حکومت کے اقدامات کی دیگر ریاستیں نظیر پیش نہیں کرسکتیں۔ تمام طبقات کی ترقی کے ساتھ سنہرے تلنگانہ کی تشکیل ممکن ہے اور اسی نظریہ کے ساتھ چیف منسٹر آگے بڑھ رہے ہیں۔ انہوں نے اپوزیشن کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا وہ جماعتیں جنہوں نے اپنی حکومت میں پسماندہ طبقات کی ترقی کو نظرانداز کردیا آج ان طبقات سے زبانی ہمدردی کا اظہار کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ فلاحی اور ترقیاتی اسکیمات میں ٹی آر ایس حکومت کا کوئی ثانی نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ملک کی کسی بھی ریاستوں میں امن و ضبط کی صورتحال اس قدر بہتر نہیں جتنی کہ تلنگانہ میں ہے۔ ریاست میں سماج کے تمام افراد خوشحال اور خود کو محفوظ تصور کررہے ہیں۔ جے اے سی کے صدرنشین پروفیسر کودنڈا رام کی جانب سے حکومت کے خلاف مہم پر تبصرہ کرتے ہوئے سرینواس یادو نے کہا کہ حکومت نے روزگار کے مواقع فراہم کرنے کیلئے تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن کے تقررات کی شرائط میں نرمی کی ہے جس سے ہزاروں بیروزگار نوجوانوں کو فائدہ ہوگا۔انہوں نے کہا کہ کودنڈا رام نوجوانوں میں یہ غلط تاثر دینے کی کوشش کررہے ہیں کہ حکومت نے مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات کے وعدہ کی تکمیل نہیں کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ تمام محکمہ جات میں مخلوعہ جائیدادوں پر مرحلہ وار انداز میں تقررات کئے جائیں گے۔ گذشتہ 20 برسوں سے سرکاری محکمہ جات میں آؤٹ سورسنگ پر خدمات حاصل کی جارہی ہیں اور کوئی تقررات نہیں کئے گئے۔ آج وہی پارٹیاں ٹی آر ایس کو تنقید کا نشانہ بنارہی ہیں۔ انہوں نے اپوزیشن پر ریاست کی ترقی میں رکاوٹ پیدا کرنے کا الزام عائد کیا اور کہا کہ آبپاشی پراجکٹس کی تعمیر میں رکاوٹ پیدا کرنا افسوسناک ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈسمبر تک ہر گھر کو پینے کے پانی کی فراہمی کیلئے حکومت اقدامات کررہی ہے اور چیف منسٹر نے وعدہ کی عدم تکمیل کی صورت میں آئندہ انتخابات میں ووٹ نہ مانگنے کا اعلان کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ 120سالہ تاریخ بننے والی کانگریس پارٹی نے اپنے دورحکومت میں تلنگانہ کی ترقی کو فراموش کردیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT