Sunday , September 24 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں جی ایس ٹی پر عمل آوری سے مسائل

تلنگانہ میں جی ایس ٹی پر عمل آوری سے مسائل

وزیر فینانس ارون جیٹلی سے کے ٹی راما راؤ کی ملاقات
حیدرآباد ۔ 20۔ جون (سیاست نیوز) وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی راما راؤ نے نئی دہلی میں مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی سے ملاقات کی ۔ انہوں نے جی ایس ٹی کے ضمن میں ریاست کو درپیش بعض مسائل کے سلسلہ میں ارون جیٹلی سے نمائندگی کی ۔ کے ٹی آر نے مشن بھگیرتا اور مشن کاکتیہ جیسی ریاست کی اہم اسکیمات کے علاوہ بیڑی صنعت اور چھوٹی اور متوسط گرانائیٹ صنعت کو جی ایس ٹی سے مستثنیٰ کرنے کی درخواست کی ۔ انہوں نے کہا کہ جی ایس ٹی سے استثنیٰ کی صورت میں مذکورہ اسکیمات پر موثر انداز میں عمل آوری کی جاسکتی ہے ۔ انہوں نے مشن بھگیرتا اور مشن کاکتیہ کی تفصیلات سے واقف کرایا اور ریاست میں بیڑی صنعت کو درپیش مسائل کے سلسلہ میں بھی نمائندگی کی ۔ انہوں نے مرکزی وزیر فینانس سے اپیل کی کہ سی ایس ٹی کے معاوضہ کے طورپ ر 350 کروڑ روپئے اور پسماندہ اضلاع کی ترقی کیلئے زیر التواء 450 کروڑ روپئے فوری طور پر تلنگانہ کو جاری کئے جائیں۔ انہوں نے سکندرآباد کے کنٹونمنٹ علاقہ میں سڑک کی توسیع کیلئے محکمہ دفاع کی اراضی حاصل کرنے اور اس کے بدلہ متبادل اراضی کی فراہمی کی تجویز سے واقف کرایا اور اس پر مرکز کی منظوری کی خواہش کی ۔ اس مسئلہ پر کے ٹی آر وزارت دفاع کے سکریٹری اور وزیر سے مذاکرات کا منصوبہ رکھتے ہیں۔ تلنگانہ حکومت سڑک کی توسیع کے سلسلہ میں ڈیفنس کی اراضی حاصل کر کے اس کے عوض میں سرکاری اراضی فراہم کرنے کا پیشکش کرچکی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی نے جی ایس ٹی رعایتوں کے سلسلہ میں کی گئی درخواست پر ہمدردانہ غور کا تیقن دیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT