Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں حکومت کا اقلیت دوست رویہ

تلنگانہ میں حکومت کا اقلیت دوست رویہ

فرقہ پرستوں کے حوصلے پست ، ملے پلی آئی ٹی آئی میں جلسہ عید ملاپ
حیدرآباد۔18اگست(سیاست نیوز) گریٹر حیدرآباد کے تمام آئی ٹی آئیز کے مسلمان ملازمین کی جانب سے ملے پلی آئی ٹی آئی میں عید ملاپ تقریب کا انعقاد عمل میں آیا۔ جس میں صدرتلنگانہ نان گزیٹیڈ آفیسرس اسوسیشن جناب ایس ایم حسینی مجیب ‘ صدر ٹی جی او ز گریٹر حیدرآباد کرشنا یادو کے علاوہ مذکورہ تنظیموں سے وابستہ دیگر سرکاری ملازمین نے بھی شرکت کی۔ جناب ایس ایم حسینی مجیب نے اس موقع پر کہاکہ 57سالوں میں تلنگانہ کی جس گنگا جمنی تہذیب کو متاثر کرنے کیا گیا مگر تلنگانہ ریاست کی تشکیل کے بعد اس کا تلنگانہ کے سرکاری ملازمین نے احیاء عمل میںلاتے ہوئے آندھرائی حکمرانوں کی سازشوں کو ناکام بنانے کاکام کیا ہے ۔ جناب ایس ایم حسینی مجیب نے کہاکہ علیحدہ ریاست تلنگانہ کی تشکیل کے بعد نئی ریاست کی حکمران جماعت کے اقلیت دوست رویہ سے فرقہ پرست طاقتیں اور تلنگانہ مخالفین کے حوصلے پست ہوگئے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ حکومت تلنگانہ کی جانب سے عنقریب جاری ہونے والے اعلامیہ کے تحت اقلیتی طبقات کو سرکاری محکموں میںبارہ فیصد تحفظات کی فراہمی کے لئے ٹی این جی اوزہر محاذ پر نمائندگی کریگی ۔ انہوں نے کہاکہ حکومت تلنگانہ بالخصوص چیف منسٹر کے چندرشیکھر رائو کے اقلیت دوست رویہ سے ریاست کے اقلیتوں کو کافی امیدیں وابستہ ہیںخاص طور پر سرکاری محکموں میںملازمتوں کے ضمن میںمسلم اقلیت اور دیگر پسماندگی کاشکار طبقات کے ساتھ انصاف ہوگا۔انہوں نے پچھلے کئی سالوں سے انصاف سے محروم سرکاری ملازمین کے ساتھ بھی انصاف کی امیدکا اظہار کیا۔ کرشنا یادو نے اس موقع پر عید کی مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہاکہ تلنگانہ ریاست کی تشکیل کے بعد ریاست کے تمام سرکاری محکموں میںعید وتہواروں کے موقع پر گنگا جمنی تہذیب کے فروغ کا بھر پور مظاہرہ دیکھنے کو مل رہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ سرکاری ملازمین کے درمیان میںباہمی اتحاد ریاست کی بے مثال ترقی کی ضمانت ہے۔ آئی ٹی آئی ملے پلی کے مسلم ملازمین محمد آصف‘ عبدالکریم‘ محمد غوث‘ محمد ریاض اور محمد خالد نے تمام مہمانوں کا استقبال کیا۔

TOPPOPULARRECENT