Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں خشک سالی صورتحال سے نمٹنے مرکز سے فنڈز کا مطالبہ

تلنگانہ میں خشک سالی صورتحال سے نمٹنے مرکز سے فنڈز کا مطالبہ

فصلوں کے نقصانات کی پابجائی ضروری ، وزیر اعظم نریندر مودی سے چیف منسٹر کے چندر شیکر راؤ کی ملاقات
حیدرآباد۔/10مئی، ( سیاست نیوز) چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے آج نئی دہلی میں وزیر اعظم نریندر مودی سے ملاقات کی۔ خشک سالی سے متاثرہ ریاستوں کے چیف منسٹرس کو وزیر اعظم نے ملاقات کیلئے مدعو کیا تھا۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے اعلیٰ سطحی وفد کے ساتھ وزیر اعظم سے ملاقات کے دوران ریاست میں خشک سالی کی صورتحال سے واقف کرایا۔ انہوں نے اس صورتحال سے نمٹنے اور کسانوں کو امداد کی فراہمی، فصلوں کے نقصانات کی پابجائی کیلئے مرکزی حکومت سے درکار فنڈز کی اجرائی کی خواہش کی۔ چیف منسٹر نے حکومت کی جانب سے کئے جارہے اقدامات سے واقف کراتے ہوئے مرکز سے فراخدلانہ امداد کی خواہش کی۔ انہوں نے بتایا کہ اس صورتحال سے نمٹنے کیلئے پانی کی سربراہی، کسانوں کو اِن پٹ سبسیڈی، کھاد اور مویشیوں کیلئے چارہ سربراہی کے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ ریاست کے 7 اضلاع کے 231منڈل خشک سالی سے متاثرہ ہیں جن کی تفصیلات وزیر اعظم کو پیش کی گئیں۔ وزیر اعظم کو بتایا گیا کہ تلنگانہ میں معمول سے 14فیصد کم بارش ریکارڈ کی گئی ہے۔ نظام آباد، رنگاریڈی، محبوب نگر اضلاع میں خشک سالی کی صورتحال سنگین ہے۔ چیف منسٹر نے خواہش کی کہ خشک سالی سے نمٹنے کیلئے ہنگامی طور پر مرکز 3064کروڑ روپئے جاری کرے۔ مرکز نے ابھی تک712کروڑ روپئے ہی جاری کرے ہیں۔ انہوں نے باقی رقم کی جلد اجرائی کی اپیل کی۔ وزیر اعظم کو بتایا گیا کہ خشک سالی کے سبب 13.52 لاکھ ہیکٹر اراضی پر کھڑی فصلیں تباہ ہوچکی ہیں۔ 21.78 لاکھ کسانوں کو بھاری نقصان ہوا۔ بتایا جاتا ہے کہ وزیر اعظم نے خشک سالی سے نمٹنے کیلئے تلنگانہ کو فراخدلانہ تعاون کا یقین دلایا۔ چیف منسٹر کے ہمراہ چیف سکریٹری ڈاکٹر راجیو شرما اور دیگر اعلیٰ عہدیداروں کے علاوہ ڈپٹی چیف منسٹر کڈیم سری ہری اور دوسرے موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT