Saturday , October 21 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں خشک سالی پر اظہار تشویش : سی پی آئی

تلنگانہ میں خشک سالی پر اظہار تشویش : سی پی آئی

کل جماعتی اجلاس طلب کرنے حکومت تلنگانہ سے مطالبہ
حیدرآباد ۔ 10 ۔ فروری : ( سیاست نیوز) : کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا تلنگانہ کمیٹی نے ریاست میں پائے جانے والے خشک سالی حالات پر اپنی گہری تشویش کا اظہار کیا اور حکومت پر خشک سالی حالات سے نمٹنے میں ناکامی کا الزام عائد کرتے ہوئے ریاست میں پائے جانے والے خشک سالی حالات کا تفصیلی جائزہ لینے کے لیے فی الفور کل جماعتی اجلاس طلب کرنے کا چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ سے پر زور مطالبہ کیا ۔ آج یہاں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے سکریٹری سی پی آئی تلنگانہ کمیٹی مسٹر سی وینکٹ ریڈی نے یہ بات کہی اور بتایا کہ ریاست تلنگانہ میں سنگین خشک سالی حالات کو حکومت نظر انداز کررہی ہے ۔ جس سے کسان کئی ایک مسائل سے دوچار ہورہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ سنگین خشک سالی حالات کے باعث ریاست بھر میں پانی کی شدید قلت پائی جارہی ہے ۔ بالخصوص دیہی علاقوں میں غریب عوام بشمول کسان خشک سالی حالات سے دوچار ہورہے ہیں ۔ لہذا فی الفور خشک سالی سے متاثرہ علاقوں میں راحت کاری اقدامات کرنے کا حکومت تلنگانہ سے پر زور مطالبہ کیا ۔ مسٹر وینکٹ ریڈی نے ضلع عادل آباد کے اوٹنور میں قبائلی یونیورسٹی کا قیام عمل میں لانے کے اپنے مطالبہ کا اعادہ کیا اور کہا کہ قبائلی یونیورسٹی کے لیے ریاست میں اوٹنور میں ایک موزوں مقام تصور کیا جاتا ہے ۔ لہذا اس مجوزہ یونیورسٹی کو اوٹنور میں ہی قائم کیا جانا چاہئے ۔ سکریٹری سی پی آئی تلنگانہ کمیٹی نے چیف منسٹر کو تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے چنامولکانور موضع کواپناتے ہوئے اس کی ترقی کا تیقن دیا تھا لیکن چیف منسٹر نے آج تک اس موضع کی ترقی پر کسی قسم کی توجہ نہیں دی اور کوئی ترقیاتی اقدامات نہیں کئے گئے جس کی وجہ سے اس موضع کے عوام میں چیف منسٹر کے تعلق سے کافی مایوسی کا اظہار پایا جارہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس موضع میں فی الفور عوام کی فلاح و بہبود کے لیے ڈبل بیڈ روم فلیٹس تعمیر کرنے کا چیف منسٹر سے مطالبہ کیا ۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر مسٹر چندر شیکھر راؤ نے ہمیشہ سنہرا تلنگانہ بنانے کی بات کررہے ہیں لیکن عملی اقدامات کی روشنی میں نہ ہی تلنگانہ کو سنہرا بنایا گیا اور نہ ہی تلنگانہ کو چاندی چاندی کیا ۔ لیکن فی الوقت ضرورت اس بات کی ہے کہ پیٹ بھرنے کے لیے اور جینے کے لیے تلنگانہ کو قابل بنایا جائے ۔ مسٹر وینکٹ ریڈی نے مزید کہا کہ ریاست میں سنگین خشک سالی حالات سے نمٹنے اور راحت کاری اقدامات کے مطالبہ پر سی پی آئی تمام ضلع ہیڈکوارٹرس پر کلکٹریٹس کے روبرو بڑے پیمانے پر 10 فروری سے احتجاجی دھرنا پروگرام منظم کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT