Friday , July 21 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں زعفرانی دہشت گردی پر اظہار تشویش

تلنگانہ میں زعفرانی دہشت گردی پر اظہار تشویش

اقلیتوں کو متحدہ پلیٹ فارم پر جمع ہونے کا مشورہ ، پروفیسر گڈم لکشمن
حیدرآباد۔8فبروری(سیاست نیوز) ریاست تلنگانہ میں زعفرانی دہشت گردی کے بڑھتے واقعات پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے سیول لبرٹیز کمیٹی تلنگانہ ریاست سکریٹری پروفیسر گڈم لکشمن نے کہاکہ مرکز میںبی جے پی اقتدار میںآنے کے بعد سارے ملک میںاقلیتوں کو منظم انداز میںنشانہ بنایا جارہاہے اور فرقہ پرست طاقتیں یہ کام پولیس کی نگرانی میںانجام دے رہی ہیں۔ انہوں نے زعفرانی دہشت گردی او رہندوفسطائی طاقتوں کی بڑھتی اجارہ داری پر ریاستی حکومت کی خاموشی کو بھی تشویش ناک قراردیا۔ آج یہاں منعقدہ ایک پریس کانفرنس میں پروفیسر جی لکشمن نے کہاکہ تلنگانہ میںبھی ہندوفسطائت طاقتیں دادری کے طرز کے واقعات کو دوہرانے کی کوشش کررہے ہیں۔ جس کا حالیہ دنوں میں عیسائی پاسٹر پر حملہ اس کا جیتا جاگتا ثبوت ہے ۔بجرنگ دل کے کارکنوں نے مصرو ف ترین سڑک پر روک کراپنی اہلیہ کے ساتھ جارہے پاسٹر کو زدوکوب کیا ۔حملے کے متعلق سیول لبرٹیز کی جانب سے ایک حقائق سے آگاہی کمیٹی تشکیل دی گئی تھی جس نے تمام واقعات کاجائزہ لینے کے بعد ایک رپورٹ تیار کی ۔ رپورٹ کے مطابق پاسٹر پر حملہ منظم سازش کانتیجہ تھا۔کمیٹی نے مہانکالی اور گاندھی نگر دونوں پولیس اسٹیشنوںسے رجوع ہوکر واقعہ اور کیس کے متعلق تفصیلات جمع کئے ہیں۔ اس میںپولیس کا رویہ مشکوک پایاگیا۔ پروفیسر جی لکشمن نے کہاکہ اقلیتوں پر اس قسم کے مظالم پر حکومت کی خاموشی ہندوفسطائی طاقتوں کی حوصلہ افزائی کی وجہہ بن رہا ہے۔انہو ں نے کہاکہ ہندوفسطائیت کے خلا ف تمام اقلیتوں کو ایک پلیٹ فارم پر جمع ہونے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ پاسٹرپر حملہ کرنے والے بجرنگیوں کے خلاف سخت کاروائی کرتے ہوئے پاسٹر کے علاج کا خرچ برداشت کرے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT