Friday , October 20 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں سوائن فلو کے مریضوں کی بڑھتی تعداد تشویشناک

تلنگانہ میں سوائن فلو کے مریضوں کی بڑھتی تعداد تشویشناک

صاف صفائی کے لیے مجلس بلدیہ کے عہدیداروں کو فوری حرکت میں آنے کی ضرورت
حیدرآباد۔20جنوری (سیاست نیوز) ریاست تلنگانہ میں سوائن فلو کے مریضوں کی بڑھتی تعداد سے وباء کے پھیلنے کے خدشات میں اضافہ ہونے لگا ہے اور موسمی تبدیلی کے اثرات سے متاثر ہونے والے افراد میں بھی اس بات کے خدشات پیدا ہونے لگے ہیں کہ کہیں وہ اس بیماری میں تو مبتلاء نہیں ہو رہے ہیں؟ سوائن فلو کے مریضوں کی تعداد میں ہو رہے اضافہ کو دیکھتے ہوئے مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے مجاز عہدیداروں کو فوری حرکت میں آتے ہوئے شہر میں صاف صفائی کے اقدامات کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے اور ساتھ ہی شہریو ںمیں شعور اجاگر کرنے کیلئے بیداری مہم بھی چلائی جانی چاہئے ۔جاریہ سال کے دوران 20سے زائدنئے سوائن فلوکے مریضوں کی نشاندہی اور 4اموات کے سبب شہریو ںمیں خوف و دہشت کا ماحول پیدا ہونے لگا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ جاریہ سال کے دوران 43ایسے افراد کی نشاندہی کی گئی ہے جنہیں سوائن فلو کا خطرہ ہے لیکن ان میں تاحال صرف 20سے زائدافراد کو سوائن فلو کی توثیق ہوئی ہے۔ ریاست تلنگانہ میں سوائن فلو کے خدشات نے شہر حیدرآباد و سکندرآباد میں خوف کی لہر پیدا کردی ہے کیونکہ ان مریضوں کے علاج کیلئے گاندھی ہاسپٹل کو بہترین دواخانہ تصور کیا جا رہا ہے اور ان کے بہتر علاج گاندھی ہاسپٹل میں ہی ممکن ہو پا رہے ہیں۔ سوائن فلو ایک وبائی مرض ہے جو بہ آسانی ایک انسان سے دوسرے انسان کو منتقل ہوتا ہے اسی لئے اس مرض کے پھیلنے میں کوئی وقت نہیں لگتا اور یہ ایک وباء کی شکل اختیار کرلیتا ہے۔ اس مرض سے بچنے کیلئے احتیاطی تدابیر اختیار کئے جانا انتہائی ضروری ہے ۔ سوائن فلو کی ابتدائی علامات میں تیز بخار ‘ شدید سر درد‘ مسلسل ناک سے پانی بہنا‘ کھانسی اور بے چینی ہیں۔ دو تا چار یوم کے دوران ان علامات کے روایتی ادویات سے ختم نہ ہونے کی صورت میں سوائن فلو کا معائنہ کروایا جانا چاہئے کیونکہ یہ ایک انتہائی خطرناک مرض تصور کیا جاتا ہے جس کے سبب تنفس کے مسائل پیدا ہونے لگتے ہیں ۔سال 2015کے دوران سوائن فلو کے مریضوں کی تعداد میں ہونے والے اضافہ کو دیکھتے ہوئے مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کی جانب سے شعور بیداری مہم چلائی گئی تھی اور شہر کے تمام علاقوں میں موجود کچہرے کے انبار کو منتقل کرنے کے اقدامات کرتے ہوئے شہر کے ہر علاقہ میں میڈیکل آفیسرس کی تعیناتی کے ذریعہ عوام میں شعور اجاگر کرنے کے ساتھ ساتھ مختلف علامات میں مبتلاء اسکولی بچوں کے معائنے کروائے گئے تھے ۔جی ایچ ایم سی کی جانب سے اب فوری شعور بیداری مہم کے ساتھ ساتھ صفائی کے انتظامات کو یقینی بناتے ہوئے میڈیکل کیمپ لگائے جانے لگیں تو سوائن فلو کی وباء کو پھیلنے سے قبل اس پر قابو پایا جاسکتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT