Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں صنعتوں کے قیام اور جی ایس ٹی کا جائزہ لینے کا فیصلہ

تلنگانہ میں صنعتوں کے قیام اور جی ایس ٹی کا جائزہ لینے کا فیصلہ

صنعتوں سے متعلق کابینی ذیلی کمیٹی کا اجلاس ، کے ٹی آر وزیر صنعت کا خطاب
حیدرآباد ۔ 6 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز ) : وزیر صنعت تلنگانہ کے ٹی آر نے جی ایس ٹی پر عمل آوری کے بعد ریاست میں بڑے پیمانے کی صنعتوں کے قیام اور دوسرے مسائل کا کابینہ کی ذیلی کمیٹی کے اجلاس میں جائزہ لیا ۔ ملک کی شہرت یافتہ کنسلٹنٹ کمپنی کی خدمات سے استفادہ کرنے کا فیصلہ کیا ۔ بھاری صنعتوں سے متعلق کابینی ذیلی کمیٹی کا آج ایک اجلاس ریاستی وزیر بھاری صنعت کے ٹی آر اور وزیر فینانس ایٹالہ راجندر کی صدارت میں منعقد ہوا ۔ جس میں مختلف محکمہ جات ، فینانس ، سیل ٹیکس ، صنعت ، مال کے علاوہ دوسرے عہدیداروں نے شرکت کی ۔ اس اجلاس میں صنعتوں کے قیام کے لیے دی جانے والی رعایت اور اس سے عائد ہونے والے مالی بوجھ کے علاوہ دوسرے امور پر تفصیلی غور کیا گیا ۔ آئندہ ذیلی کابینہ کمیٹی کے اجلاس تک ملک کی شہرت یافتہ کنسلٹنٹ کمپنی کی خدمات سے استفادہ کرکے جی ایس ٹی کے اثرات کا جائزہ لینے اور اس کی رپورٹ پر چیف منسٹر کے سی آر سے ملاقات کرتے ہوئے مختلف مسائل پر ضروری فیصلے کرنے سے اتفاق کیا گیا ۔ اس اجلاس میں سی آئی آئی کے نمائندوں نے بھی شرکت کرتے ہوئے جی ایس ٹی پر مختلف ریاستوں کی جانب سے کیے جانے والے اقدامات پر آئندہ 2 ہفتوں میں کابینہ کی ذیلی کمیٹی کو رپورٹ دینے کا تیقن دیا ۔ ریاست میں بہترین بزنس کو فروغ دینے کے لیے کے ٹی آر نے توسیعی اجلاس کا انعقاد کیا ۔ جس میں مختلف محکمہ جات کے اعلیٰ عہدیداروں نے شرکت کی ۔ (Ease of Doing Business) میں جاریہ سال بھی ریاست تلنگانہ کو ملک بھر میں سرفہرست بنانے کے لیے تمام محکمہ جات کے عہدیداروں کو ضروری اقدامات کرنے کے احکامات جاری کئے ۔ گذشتہ سال جن محکمہ جات کے عہدیداروں کو مسائل کا سامنا کرنا پڑا ہے ۔ اس سے تجربہ حاصل کرتے ہوئے اپنے کاموں میں تیزی پیدا کرنے کی ہدایت دی ۔ (EODB) عمدہ رینک حاصل کرنے کے لیے جو فیصلے کئے گئے اس پر مکمل عمل آوری کو یقینی بنانے کے لیے متحدہ طور پر کام کرنے کا عہدیداروں کو مشورہ دیا ۔ کام میں پختگی پیدا کرنے اور نچلے سطح کے ملازمین میں جوش و خروش پیدا کرنے کے لیے تربیتی کلاسیس کا اہتمام کرنے پر بھی زور دیا ۔ فیصلوں کو صرف کاغذ کی حد تک محدود رکھنے کے خلاف سخت انتباہ دیا ۔ عہدیداروں نے بتایا کہ 108 معاملت میں تبدیلی ضروری ہے ان سب کو فوری طور پر حل کرنے کی کے ٹی آر نے عہدیداروں کو ہدایت دی ۔ مختلف محکمہ جات میں زیر التواء مسائل پر بھی غور کیا گیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT