Saturday , August 19 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں عنقریب نئی میڈیکل پالیسی کا اعلان

تلنگانہ میں عنقریب نئی میڈیکل پالیسی کا اعلان

دیہی علاقوں میں غریب عوام کو بہتر طبی سہولتیں فراہم کرنے ٹی آر ایس حکومت کا منصوبہ

حیدرآباد۔11 اکتوبر (سیاست نیوز) وزیر صحت ڈاکٹر کے لکشما ریڈی نے بتایا کہ ریاست کے لئے عنقریب ایک نئی میڈیکل پالیسی کا اعلان کیا جائے گا۔ حکومت تلنگانہ دیہی علاقوں میں غریب عوام کو بہتر طبی سہولتیں فراہم کرنے کا منصوبہ رکھتی ہے۔ اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے وزیر صحت نے کہا کہ ریاستی حکومت نے پہلے ہی ایک کابینی سب کمیٹی تشکیل دی ہے جو نئی میڈیکل پالیسی وضع کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ اس پالیسی کا مقصد غریبوں کی طبی نگہداشت کو یقینی بنایا جاسکے۔ وزیر صحت نے کہا کہ اس کمیٹی کی قیادت وہ خود کررہے ہیں جس میں پنچایت راج کے وزیر کے تارک راما راؤ اور آر اینڈ بی وزیر ٹی ناگیشور راؤ ارکان ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس کمیٹی کے دو تین اجلاس منعقد کئے جائیں گے، اس کے بعد ریاستی حکومت کو رپورٹ پیش کی جائے گی۔ ہر منڈل ہیڈکوارٹرس میں 30 بستروں والا دواخانہ قائم کرنے کی تجویز ہے۔ ہر اسمبلی حلقہ میں 100 بستروں والے دواخانے کے قیام کی تجویز ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہر ضلع ہیڈکوارٹرس پر نمس جیسے دواخانہ قائم کئے جائیں گے۔ لکشما ریڈی نے کہا کہ تمام ضلع اور ایریا ہاسپٹلس کو آئی سی یو یونٹ سے آراستہ کیا جائے گا اور تمام سرکاری دواخانوں میں مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات عمل میں لائے جائیں گے۔ قبل ازیں وزیر صحت نے ضلع نظام آباد میں 1.75 کروڑ روپئے لاگت سے 100 بستروں والے دواخانہ کی تعمیر کیلئے سنگ بنیاد رکھا۔ انہوں نے کہا کہ اس دواخانہ کی تعمیر ایک سال کے اندر مکمل کرلی جائے گی اور دواخانہ کیلئے مطلوب عملہ اور آلات بھی فراہم کئے جائیں گے۔ انہوں نے کشن نگر اور پوچم پاڈ میں 30 بستروں والے دواخانوں کی عمارات کا افتتاح کیا۔ اس موقع پر ارکان اسمبلی جیون ریڈی اور ٹی پرشانت ریڈی کے علاوہ ضلع کلکٹر نظام آباد یو گیتا رانی بھی شامل تھیں۔

TOPPOPULARRECENT