Thursday , August 17 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں قیدیوں کو اچھا انسان بنانے کی مساعی ، باز آبادکاری

تلنگانہ میں قیدیوں کو اچھا انسان بنانے کی مساعی ، باز آبادکاری

حکومت کے اصلاحات پروگرام کے تحت 500 خطرناک قیدیوں کی کونسلنگ ، جرائم پر قابو پانے پر توجہ
حیدرآباد ۔ 8 ۔ ستمبر : ( سیاست نیوز ) : حکومت تلنگانہ نے ریاست میں قیدیوں کو اچھا انسان بنانے اور انہیں سماج کے اصل دھارے میں لانے کی مساعی کا آغاز کیا ہے ۔ اس خصوص میں تلنگانہ محکمہ محابس کی جانب سے منفرد مساعی کی جارہی ہے ۔ اس کے تحت ایسے خطرناک 500 قیدیوں کی نشاندہی کی گئی ہے جنہیں اچھا انسان بننے کا موقع دیا جائے گا ۔ ان کی کونسلنگ کے ذریعہ باز آباد کاری کی جائے گی ۔ رام کرشنا مٹھ اور عثمانیہ یونیورسٹی کے شیام سنٹر میں کونسلنگ کی جاکر ان خطرناک قیدیوں کو زندگی کے اصل دھارے میں شامل کیا جائے گا ۔ اصلاحات کے پروگرام کو پورا کرتے ہوئے حکومت قیدیوں میں سدھار لانے کی کوشش کررہی ہے ۔ اس سلسلہ میں حکومت نے قیدیوں کے لیے تربیتی کلاسیس اور مختلف پروگرام مرتب کیے ہیں ۔ یہ کوشش پراجکٹ ’ مہاپریورتن ‘ کا حصہ ہوگی ۔ اس کو یوم آزادی کے موقع پر محکمہ محابس نے تیار کیا تھا ۔ اس منصوبہ کے مطابق ریاست کے تمام محابس اور ڈسٹرکٹ جیلوں کے بشمول تمام جیلوں سے تعلق رکھنے والے محابس بہبود عہدیدار اپنی نگرانی میں ان قیدیوں پر نظر رکھیں گے ۔ ان کی سرگرمیوں اور عادتوں کا جائزہ لیں گے ۔ ان کی رہائی عمل میں آنے کے بعد ان پر بھی کڑی نظر رکھی جائے گی ۔ ان کے اچھے برتاؤ اور رکھ رکھاؤ کو ملحوظ رکھتے ہوئے ان کے لیے روزگار فراہم کیا جائے گا یا روزگار کے لیے سفارش کی جائے گی ۔ اصلاحات سے اس عمل کو کامیاب بنانے کے لیے عہدیداروں کو ہدایت دی گئی ہے ۔ حکومت کا یہ ہمہ رخی پروگرام ہے ۔ جس میں قیدیوں کی زمرہ بندی کرتے ہوئے انہیں تربیت دی جائے گی ۔ ایسے قیدی جو حالات اور مجبوری کے تحت جرائم کا ارتکاب کیے ہیں یا غربت ، خراب صحبت سے وہ مجرم بنے ہیں یا انہیں جھوٹے مقدمات میں پھنسا کر سزا دی گئی ہے اس کی نشاندہی کرنے کے بعد ان کی باز آباد کاری کی جائے گی ۔ ڈائرکٹر جنرل تلنگانہ محابس وی کے سنگھ نے کہا کہ ذمہ دار عہدیداروں کو ہدایت دی جائے گی کہ وہ قیدیوں کی بہبود کے لیے کام کریں ان کی کونسلنگ کرتے ہوئے ہر ایک جیل میں ایسے قیدیوں کی نشاندہی کر کے اس کی رپورٹ پیش کریں ۔ یہ رپورٹ ویلفیر آفیسرس حیدرآباد ہیڈکوارٹرس کو کی جانی ہوتی ہے ۔ اس پروگرام کا مقصد قیدیوں کو اچھا انسان بنانا ہے ۔ اس وقت تلنگانہ کی جیلوں میں 6700 قیدی ہیں ان میں سے 4000 قیدی زیر دریافت ہیں ۔ ریاست کے جیلوں میں سالانہ ایک لاکھ قیدیوں کو محروس رکھا جاتا ہے ان میں سے ہر سال 20 ہزار قیدی اپنی سزا کی مدت ختم کرنے کے بعد رہا کئے جاتے ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT