Tuesday , September 19 2017
Home / Top Stories / تلنگانہ میں مانسون کے دوران معمول سے زیادہ بارش

تلنگانہ میں مانسون کے دوران معمول سے زیادہ بارش

فصلوں کو فائدہ ، بشمول عثمان ساگر کئی ذخائر آب کی سطح آب میں اضافہ
حیدرآباد 2 اگسٹ (سیاست نیوز) محکمہ موسمیات نے ساحلی آندھراپردیش اور تلنگانہ میں آئندہ پانچ دن کے دوران اوسط اور موسلا دھار بارش کی پیش قیاسی کی ہے۔ شمالی اڑیسہ کے ساحل کے قریب خلیج بنگال میں ہوا کے دباؤ میں کمی کے سبب 48 گھنٹوں کے دوران دونوں تلگو ریاستوں کے کئی مقامات پر طوفانی بارش کا امکان بھی ظاہر کیا گیا ہے۔ تاہم حیدرآباد میں دن یا رات کے اوقات میں ہلکی بارش ہوسکتی ہے اور مطلع عام طور پر ابرآلود رہے گا۔ محکمہ موسمیات کے عہدیداروں نے مزید کہاکہ حالیہ بارش سے زرعی سرگرمیوں میں زبردست اضافہ ہوا ہے بالخصوص موسم خریف کیلئے برے پیمانے پر تخم ریزی ہوئی اور تین سال بعد رواں موسم سے اچھی فصلوں کی توقع کی جاسکتی ہے جس کے نتیجہ میں زرعی اشیاء کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ کے رجحان پر بڑی حد تک قابو پایا جاسکتا ہے۔ جولائی کے دوران تلنگانہ میں معمول سے 9.8 فیصد زائد بارش ہوئی۔ جس سے ریاست کے کئی ذخائرآب کی سطح میں اطمینان بخش اضافہ ہوا ہے۔ حیدرآباد کے تاریخی ذخیرہ آب عثمان ساگر کے علاوہ حمایت ساگر کی سطح آب میں بھی زبردست اضافہ ہوا ہے۔ عہدیداروں کا خیال ہے کہ موسم بارش کے اختتام تک یہ دونوں ذخائرآب پوری طرح لبریز ہوجائیں گے۔ آندھراپردیش کے رائل سیما میں سری سیلم ریزروائر کی سطح آب میں گزشتہ 24گھنٹوں کے دوران 6فیٹ کا اضافہ ہوا ہے ۔آبی سطح آج 824.6 فیٹ ریکارڈ کی گئی ۔ جبکہ اس کی مکمل سطح 885 فیٹ ہے ۔ آئندہ تین دنوں کے دوران کرناٹک میں بارش کا امکان ہے جس سے سری سیلم میں پانی کے بہاؤ میں اضافہ کا امکان ہے ۔توقع ہے کہ اندرون ایک ہفتہ اس کی سطح مکمل ہوجائے گی ۔محکمہ موسمیات کی پیش قیاسی کے مطابق اگسٹ ستمبر کے دوران معمول سے 106 فیصد زائد بارش ہوسکتی ہے۔

TOPPOPULARRECENT