Wednesday , July 26 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں ماوسٹ سرگرمیوں میں اضافہ

تلنگانہ میں ماوسٹ سرگرمیوں میں اضافہ

اضلاع کے بعد شہر تک رسائی، رچہ کنڈہ پولیس حدود میں پوسٹرس
حیدرآباد۔/6مئی، ( سیاست نیوز) ریاست تلنگانہ میں ماوسٹ سرگرمیاں دن بہ دن زور پکڑتی جارہی ہیں۔ سدی پیٹ ، کاغذ نگر اور دیگر علاقوں میں اپنے وجود کا احساس دلانے کے بعد نکسلائیٹ اب شہری علاقوں کی طرف بھی بڑھ رہے ہیں۔ حالیہ دنوں تشکیل کردہ نئے کمشنریٹ راچہ کنڈہ میں نکسلائیٹ کے پوسٹرس نمودار ہوئے تاہم پولیس راچہ کنڈہ اس پوسٹرس کو فرضی مانتی ہے اور اپنے طور پر جواز بھی پیش کررہی ہے۔ تاہم پوسٹر جو راچہ کنڈہ دلم کے نام سے لگائے گئے اس میں صاف طور پر مطالبہ کیا گیاہے کہ راچہ کنڈہ کے قدرتی وسائل کا تحفظ کیا جائے۔ نکسلائیٹ کے پوسٹرس میں چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے خلاف سخت الفاظ اور مقامی رکن اسمبلی شیکھر ریڈی سے بھی سوال کیا گیا ہے ۔ راچہ کنڈہ کے علاقہ بھونگیر میں پوسٹرس کی موجودگی سے پولیس حلقوں میں بے چینی پھیل گئی ہے۔ ایک عرصہ تک ان علاقوں میں نکسلائیٹ کی سرگرمیوں کا مقامی مخبروں اور بھونگیر نعیم کے نیٹ ورک سے دبادیا گیا تھا۔ تاہم نعیم کی انکاؤنٹر میں ہلاکت کے بعد اس کی ٹولی کے بکھر جانے کے بعد اب ایسا سمجھا جاتا ہے کہ نکسلائیٹ دوبارہ اس مقام ہی سے سرگرم ہورہے ہیں۔ پولیس کے اعلیٰ عہدیداران پوسٹرس کو نچلی اور سیاسی فائدہ کے لئے کی گئی حرکت تصور کرتے ہیں لیکن دوسری طرف پولیس نے سخت چوکسی اختیار کرلی ہے۔ ایک اعلیٰ عہدیدار کا کہنا ہے کہ پوسٹرس جو اندرون 24 گھنٹے دو مقامات پر لگائے گئے ان میں مارکرپن کا استعمال کیا گیا جبکہ پینٹ برش کا استعمال کرتے ہیں۔ ایسا سمجھا جارہا ہے کہ راچہ کنڈہ دلم سرگرم تو نہیں لیکن نکسلائیٹ اپنے نیٹ ورک اور سرگرمیوں میں شدت پیدا کرنے پولیس کے لئے ان پوسٹرس نمودار ہونا یقینا پریشانی کا باعث بن رہا ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT