Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں مخلوعہ جائیدادوں کیلئے آج دوسرے اعلامیہ کی اجرائی

تلنگانہ میں مخلوعہ جائیدادوں کیلئے آج دوسرے اعلامیہ کی اجرائی

انجینئرس 563 جائیدادیں ، چار فیصد تحفظات پر عمل ، تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن
حیدرآباد۔/28 اگسٹ، ( سیاست نیوز) تلنگانہ میں مخلوعہ سرکاری جائیدادوں پر تقررات کیلئے تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن کی جانب سے کل دوسرا اعلامیہ جاری کیا جائے گا جس کے تحت 4 سرکاری محکمہ جات میں 563 اسسٹنٹ انجینئرس کے تقررات کیلئے امیدواروں سے درخواستیں طلب کی جائیں گی۔ صدرنشین پبلک سرویس کمیشن ڈاکٹر چکراپانی اور ارکان این وٹھل اور متین الدین قادری نے اعلامیہ اور تقررات کے سلسلہ میں امتحان کے نصاب کو قطعیت دے دی ہے۔ پبلک سرویس کمیشن نے پہلے مرحلہ میں 770 جائیدادوں پر تقررات کا اعلامیہ جاری کیا تھا۔ دوسرے مرحلہ میں جن محکمہ جات میں اسسٹنٹ انجینئرس کے عہدہ پر تقررات کئے جائیں گے ان میں عمارات و شوارع، کمانڈ ایریا ڈیولپمنٹ، پبلک ہیلت اور پنچایت راج شامل ہیں۔ کمیشن کے رکن متین الدین قادری نے بتایا کہ دوسرے اعلامیہ کے تحت اسسٹنٹ انجینئر کی جائیدادوں کیلئے بنیادی اہلیت میں امیدوار کا انجینئرنگ میں ڈپلوما ہولڈر ہونا ضروری ہے۔ اس کے علاوہ انجینئرنگ سے متعلق دیگر ڈگری ہولڈرس بھی درخواستیں داخل کرنے کے اہل ہوں گے۔ امیدواروں کی عمر یکم جولائی کو کم سے کم 18اور زیادہ سے زیادہ 44سال ہونی چاہیئے۔ تحفظات کے زمرہ میں امیدواروں کو عمر کی حد میں کی گئی رعایت برقرار رہے گی۔ انہوں نے بتایا کہ ان جائیدادوں پر تقررات کیلئے روسٹر سسٹم پر عمل آوری کی جائے گی جس میں مسلمانوں کیلئے 4فیصد تحفظات شامل ہیں۔امیدوار کل29 اگسٹ سے تلنگانہ پبلک سرویس کمیشن کی ویب سائٹ www.tspsc.gov.in پر آن لائن درخواستیں داخل کرسکتے ہیں۔ درخواستیں داخل کرنے کی آخری تاریخ 28ستمبر مقرر کی گئی ہے۔ ان جائیدادوں سے متعلق امتحانات کیلئے جس نصاب کو قطعیت دی گئی ہے وہ کمیشن کی ویب سائیٹ پر موجود ہیں۔ امیدوار امتحانات سے ایک ہفتہ قبل ہال ٹکٹ کمیشن کی ویب سائیٹ سے ڈاؤن لوڈ کرسکتے ہیں۔ امتحانات 25اکٹوبر کو منعقد ہوں گے جو ایچ ایم ڈی اے کے حدود میں منعقد ہوں گے۔ کمیشن کے مطابق پہلے مرحلہ میں سیول انجینئرس کیلئے جو اعلامیہ جاری کیا گیا تھا اس کے لئے 15433 درخواستیں داخل کی گئی ہیں۔ سیول انجینئرس کی مذکورہ جائیدادوں پر تقررات کے سلسلہ میں اقلیتی امیدوار تحفظات سے استفادہ کرتے ہوئے سرکاری محکمہ جات میں اپنی نمائندگی میں اضافہ کرسکتے ہیں۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT