Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں مزید اضلاع کے اضافہ پر غور و خوض

تلنگانہ میں مزید اضلاع کے اضافہ پر غور و خوض

وقفہ سوالات میں ارکان اسمبلی کے استفسار پر محمد محمود علی کا جواب
حیدرآباد /7 اکتوبر (سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے کہا کہ تلنگانہ کے دس اضلاع میں مزید نئے اضلاع کے اضافہ کی تجویز حکومت کے پاس زیر غور ہے۔ وقفہ سوالات کے دوران ارکان اسمبلی کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے انھوں نے کہا کہ تلنگانہ کے ہر ضلع میں اوسطاً 35 لاکھ آبادی ہے، جب کہ بڑا ضلع ہونے کی وجہ سے کلکٹرس اور ایس پیز کو خدمات انجام دینے میں مشکلات پیش آرہی ہیں۔ اس دوران مجلس کے رکن اسمبلی احمد پاشاہ قادری نے سوال کیا کہ حیدرآباد کو چار حصوں میں تقسیم کرنے کی تجویز زیر غور ہونے کی اطلاعات ہیں، اگر ایسی کوئی تجویز ہے تو مجلس سے مشاورت کی جانی چاہئے اور مجلس اس معاملے میں اپنی تجویز پیش کرے گی۔ دریں اثناء ڈپٹی اسپیکر پدما دیویندر ریڈی اور دیگر کئی ارکان نے نئے اضلاع کے اضافہ کی تجویز کا خیرمقدم کرتے ہوئے اپنے اپنے اضلاع کی تقسیم کا مطالبہ کیا۔ علاوہ ازیں کئی رکن اسمبلی اس مسئلہ پر اپنی رائے پیش کرنا چاہتے تھے، تاہم اسپیکر اسمبلی نے کہا کہ وہ ارکان اسمبلی کے جذبات کو سمجھ سکتے ہیں، اس کے لئے حکومت نے ایک اعلی سطحی کمیٹی تشکیل دی ہے، جس کی رپورٹ وصول ہونے کے بعد حکومت اس مسئلہ پر غور کرے گی اور ساتھ ہی تمام سیاسی جماعتوں کے منتخب نمائندوں سے صلاح و مشورہ کے بعد نئے اضلاع کے اضافہ کے سلسلے میں فیصلہ کرے گی۔

TOPPOPULARRECENT