Friday , May 26 2017
Home / Top Stories / تلنگانہ میں نیشنل ٹرانسپورٹ اکیڈیمی قائم کرنے کا مطالبہ

تلنگانہ میں نیشنل ٹرانسپورٹ اکیڈیمی قائم کرنے کا مطالبہ

اسمارٹ ٹرانسپورٹ کیلئے 250کروڑ روپئے جاری کرنے کی اپیل، نیتن گڈکری سے مہیندر ریڈی کی ملاقات
حیدرآباد۔/8 فبروری، ( سیاست نیوز) ریاستی وزیر ٹرانسپورٹ مہیندرریڈی نے مرکزی وزیر ٹرانسپورٹ نتن گڈکری سے ملاقات کرتے ہوئے تلنگانہ میں نیشنل ٹرانسپورٹ اکیڈیمی قائم کرنے اور اسمارٹ ٹرانسپورٹ کیلئے 250 کروڑ روپئے کے فنڈز جاری کرنے کی اپیل کی۔ مہیندر ریڈی آج دہلی میں ٹی آر ایس کے رکن پارلیمنٹ بی بی پاٹل پرنسپل سکریٹری محکمہ ٹرانسپورٹ سنیل شرما اور دوسرے عہدیداروں کے ساتھ مرکزی وزیر ٹرانسپورٹ نیتن گڈکری سے ملاقات کی اور انہیں نیشنل پولیس اکیڈیمی کے طرز پر نیشنل ٹرانسپورٹ اکیڈیمی تلنگانہ میں قائم کرنے اور اس کے لئے فوری طور پر 60کروڑ روپئے جاری کرنے کی اپیل کی ۔ وزیر ٹرانسپورٹ نے بتایا کہ حکومت تلنگانہ بالخصوص محکمہ ٹرانسپورٹ ریاست کو حادثات سے پاک بنانے اور حادثاتی اموات کو گھٹانے کیلئے کئے جانے والے اقدامات سے مرکزی وزیر کو واقف کراتے ہوئے کہا کہ چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر روڈ سیفٹی پر خصوصی توجہ دے رہے ہیں۔ ایسے میں مرکزی حکومت نئی تشکیل پانے والی ریاست تلنگانہ سے تعاون کریں۔ روڈ سیفٹی اور ریاست میں شعور بیداری پروگرام کو تحریک کی طرز پر چلانے کیلئے 250کروڑ روپئے فراہم کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے تحریری یادداشت پیش کی۔ ٹریفک حادثات کی روک تھام کیلئے عوام بالخصوص طلباء و نوجوانوں میں شعور بیدار کرنے تعلیمی اداروں میں روڈ سیفٹی کلب قائم کرتے ہوئے 20کروڑ منظور کرنے ، ریاست کو حادثات سے پاک بنانے کیلئے ریاست کے تمام اضلاع میں ڈرائیونگ اسکولس کے طرز پر آئی ٹی آئی سنٹرس قائم کرنے ، لائیٹ اور ہیوی ڈرائیونگ کی تربیت کیلئے 60 کروڑ روپئے منظور کرنے کی اپیل کی۔ ریاستی وزیر ٹرانسپورٹ نے نیتن گڈکری کو بتایا کہ ریاستی تلنگانہ میں 2592کیلو میٹر 16 قومی شاہراہیں،44,3152 کیلو میٹر ریاستی شاہراہیں، 31,22 ہزار مقامی شاہراہیں ہیں جن میں 137 ایسی سڑکیں ہیں جہاں حادثات کے خطرات زیادہ ہیں۔ ان سڑکوں کو بھی حادثات سے پاک بنانے کیلئے 90 کروڑ روپئے جاری کرنے کا مطالبہ کیا۔ روڈ سیفٹی قوانین کی خلاف ورزی کرنے والوں کو کنٹرول کرنے کے ساتھ ساتھ حادثات کا شکار متاثرین کی مدد کرنے والی گاڑیوں کو ڈاٹا بیس سسٹم سے مربوط کرنے کیلئے 30کروڑ روپئے منظور کرنے کا مطالبہ کیا۔اس کے علاوہ ڈرائیورس کیلئے ریسٹ رومس بنانے میں بھی تعاون کرنے پر زور دیا۔ مرکزی وزیر ٹرانسپورٹ گڈکری نے ریاست میں روڈ سیفٹی کیلئے حکومت تلنگانہ کی جانب سے کئے جانے والے اقدامات بالخصوص ریاست کو نقد لین دین سے پاک کرنے محکمہ ٹرانسپورٹ میں عمل کرنے والے ایم ویالٹ کی ستائش کی۔ تلنگانہ کی طرح ملک کی دوسری ریاستوں میں بھی روڈ سیفٹی کے پروگرامس پر عمل کرنے سے حادثات بڑی حد تک گھٹ جانے کا دعویٰ کیا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT