Monday , June 26 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں ورکرس کی بہبود کیلئے موثر اقدامات

تلنگانہ میں ورکرس کی بہبود کیلئے موثر اقدامات

ہینڈلوم اور پاورلوم بافندوں کو ترقی دینے جامع پالیسی ،چیف منسٹر کا بیان

حیدرآباد۔ 19 فروری (سیاست نیوز) چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ نے آج کہا کہ اُن کی حکومت ریاست میں ورکرس کی بہبود کیلئے موثر اقدامات کررہی ہے۔ خاص کر ہینڈلوم اور پاور لوم بافندوں کی ترقی کیلئے ایک جامع پالیسی وضع کی جائے گی تاکہ یہ لوگ مستحکم اور خوش حال زندگی گزار سکے۔ کے سی آر نے کہا کہ ان کی حکومت، ورکرس کی بہبود اور ترقی کیلئے تمام اقدامات کررہی ہے، ریاست میں ہینڈلوم کو فروغ دیا جارہا ہے اور آنے والے بجٹ میں اس شعبہ کیلئے خاطر خواہ رقم مختص کی جائے گی۔ چیف منسٹر نے کہا کہ وہ چاہتے ہیں کہ ریاست کے بافندوں اور ورکرس کو اچھی زندگی عطا کی جائے۔ یہ لوگ غربت کا شکار ہیں اور ان کی زندگی مختلف مسائل سے دوچار ہے۔ اسی لئے یہ لوگ آئے دن خودکشی کررہے ہیں۔ فاقہ کشی کا شکار ہوکر موت کو گلے لگا رہے ہیں۔ چندر شیکھر راؤ نے مزید کہا کہ ورکرس کو یہ خوشحال زندگی جینا کا حق حاصل ہے۔ سرسلہ اور پوچم پلی کے ہینڈلوم ورکرس کو ترقی دینے تلنگانہ حکومت ہر ممکنہ اقدامات کرے گی۔ یہاں کے ورکرس خودکشی کررہے ہیں، اب ایسا نہیں ہوگا۔ تلنگانہ کے ہینڈلوم ورکرس پورے اعتماد کے ساتھ خوشحال زندگی گذاریں گے۔ یہ بڑی بدبختی کی بات ہے کہ تلنگانہ میں ہینڈلوم صنعت کسی زمانے میں مشہور و مقبول تھی، اب ناگفتہ بہ حالت میں ہے۔ پرگتی بھون پر ہینڈلوم ورکرس بہبودی اور ہینڈلوم ڈیولپمنٹ پر منعقدہ ایک جائزہ اجلاس کے بعد کے سی آر نے کہا کہ نارائن پیٹ، گدوال اور پوچم پلی میں سلک ساڑیوں کی تیاری میں زبردست تبدیلی آئی ہے۔ اس موقع پر ریاستی وزراء کے ٹی راما راؤ ، ٹی ناگیشور راؤ ، حکومت کے چیف ایڈوائزر راجیو شرما ، چیف سیکریٹری ایس پی سنگھ اور دیگر عہدیدار موجود تھے۔ چیف منسٹر نے کہا کہ ان کی حکومت ہینڈلوم ورکرس کو ماہانہ 15 تا 20 ہزار روپئے کی آمدنی کے قابل بنانا چاہتی ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT