Friday , August 18 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں 24 گھنٹے تھری فیز برقی سربراہی یقینی

تلنگانہ میں 24 گھنٹے تھری فیز برقی سربراہی یقینی

س30 سال سے درپیش برقی مسائل کی یکسوئی کا وعدہ پورا کرنے چیف منسٹر کا عزم
حیدرآباد ۔ 2 ۔ اپریل : ( سیاست نیوز ) : چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے کہا کہ ان کی حکومت نے تلنگانہ میں گذشتہ 30 سال سے درپیش برقی مشکلات کو دور کیا ہے اور اپنے وعدے کے مطابق عوام کو موثر برقی کی سربراہی کو یقینی بنایا ۔ بلکہ آئندہ دو تین سال یعنی 2019 تک ( 24 ) گھنٹے تھری فیز برقی سربراہ کی جائے گی ۔ انہوں نے اپوزیشن جماعتوں کے رویہ پر اپنی سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حکومت آبپاشی کی سہولتیں تلنگانہ عوام کے لیے فراہم کرنے کی کوشش کررہی ہے اپوزیشن جماعتیں اس اقدام کو بھی سیاسی رنگ دیتے ہوئے حکومت کو تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں ۔ چیف منسٹر جنہوں نے دو روزہ دورہ نظام آباد کے اختتام پر حیدرآباد واپسی سے قبل اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے حلقہ اسمبلی بانسواڑہ کے لیے خصوصی طور پر بھاری رقومات مختص کیے اور اعلان کیا کہ 76 پنچایتوں کے منجملہ ہر پنچایت کے لیے 15 لاکھ روپئے خصوصی فنڈز مختص کرنے کے ساتھ ساتھ بانسواڑہ مستقر کے لیے ایک کروڑ روپئے منظور کئے ۔ انہوں نے آبپاشی پراجکٹس کی ری ڈیزائننگ کے مسئلہ پر اسمبلی میں پاور پوائنٹ پریزنٹیشن کے لیے تمام جماعتوں کو مدعو کیا تاکہ اپوزیشن جماعتوں میں حکومت کی جانب سے کئے جانے والے اقدامات کے تعلق سے پائے جانے والے شکوک و شبہات کو دور کیا جاسکے ۔ چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے اپوزیشن بالخصوص کانگریس اور تلگو دیشم پارٹی کے طرز عمل پر اپنے شدید افسوس کا اظہار کیا اور کہا کہ اسمبلی میں پاور پوائنٹ پریزینٹیشن کے بعد پائے جانے والے شکوک و شبہات کو دور کرنے کے لیے مختصر مباحث بھی کئے گئے ۔ لیکن سابق میں اپنی ناکامیوں سے شرمندہ کانگریس اور تلگو دیشم پارٹیوں نے اسمبلی میں پیش کئے گئے یادگار پاور پوائنٹ پریزینٹیشن سے راہ فرار اختیار کیں ۔ انہوں نے پھر ایکبار اپنے اس عزم کا اعادہ کیا کہ تلنگانہ عوام کو ان کے دئیے ہوئے تیقن کیے ہوئے وعدے کے مطابق حکومت بہر صورت آئندہ دنوں میں ایک کروڑ ایکر اراضیات کو پانی سربراہ کر دکھائے گی ۔ چیف منسٹر نے کانگریس و تلگو دیشم پارٹیوں کو حدف ملامت بناتے ہوئے کہا کہ ریاست کی تشکیل کے بعد سے اب تک جو بھی انتخابات منعقد کئے گئے ان میں تلنگانہ عوام نے تلنگانہ راشٹرا سمیتی پر ہی زبردست و بھرپور اعتماد و بھروسہ کر کے ٹی آر ایس پارٹی کو شاندار کامیابی سے ہمکنار کیا اور اس طرح اپنی ڈپازٹ بچانے سے بھی قاصر کانگریس پارٹی اور تلگو دیشم پارٹی ہم پر اور بالخصوص تلنگانہ حکومت کے خلاف ریمارکس کرنا آیا یہ کانگریس اور تلگو دیشم پارٹی کو زیب دے گا ۔ مسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے پر زور الفاظ میں کہا کہ ریاست کے تمام اضلاع کو بلا تخصیص سیاسی وابستگی زبردست ترقی دیتے ہوئے ریاست تلنگانہ کی ترقی کو یقینی بنایا جائے گا ۔ بالخصوص ریاست میں ڈبل بیڈ روم مکان کی تعمیر کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ اپوزیشن کانگریس اور تلگو دیشم پارٹیوں نے ڈبل بیڈ روم مکانات کی تعمیر کو برداشت نہیں کرپارہی ہے بلکہ اس کو بھی سیاسی تناظر میں دیکھتے ہوئے سیاسی مسائل پیدا کرنے کے لیے کوشاں ہے جب کہ حقیقت تو یہ ہے کہ آئندہ کی دو نسلوں تک امکنہ کے مسائل سے عوام کو نجات دلانا ہی حکومت کا اہم مقصد ہے ۔ چیف منسٹر نے مزید کہا کہ قرض حاصل کر کے ریاستی اسمبلی و ریاستی سکریٹریٹ عمارتوں کی تکمیل کے لیے واضح اقدامات کئے جائیں گے ۔۔

TOPPOPULARRECENT