Friday , October 20 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ میں 44,64,699 مسلمان گریٹر حیدرآباد کو اول مقام ( 21 لاکھ ) ، کھمم آخری نمبر پر صرف 1.58 لاکھ

تلنگانہ میں 44,64,699 مسلمان گریٹر حیدرآباد کو اول مقام ( 21 لاکھ ) ، کھمم آخری نمبر پر صرف 1.58 لاکھ

جملہ اقلیتیں 50,01,404
حیدرآباد /26 اگست (سیاست نیوز) ریاست تلنگانہ میں مسلمانوں کی جملہ آبادی 44,64,699 (یعنی 12.68 فیصد) ہے۔نئے اعداد و شمار کے مطابق سب سے زیادہ مسلمانوں کا تناسب حیدرآباد میں ہے اور سب سے کم مسلمان ضلع کھمم میں ہیں۔ مرکز کی جانب سے جاری کردہ نئے اعداد و شمار کا جائزہ لیا جائے تو تلنگانہ کی جملہ آبادی 3,51,93,978 ہے، جس میں ہندوؤں کی آبادی 2,99,48,451 (یعنی 85.09 فیصد) ہے۔ متحدہ آندھرا پردیش میں اقلیتوں کی آبادی 9 فیصد تھی، جب کہ ریاست کی تقسیم کے بعد تلنگانہ میں مسلمانوں کی آبادی 11 فیصد ہونے کا اندازہ لگایا جا رہا تھا، تاہم 2011ء کے اعداد و شمار نے تمام اندازوں کو غلط ثابت کیا اور یہ واضح ہوگیا کہ تلنگانہ میں مسلمانوں کی آبادی 12.68 فیصد ہے۔ ساتھ ہی دیگر اقلیتوں کا تناسب الگ الگ پیش کیا گیا ہے۔ مسلم تحفظات کی مخالفت کرنے والی جماعتوں کی جانب سے تلنگانہ میں مسلمانوں کی آبادی کے تناسب سے زیادہ انھیں تحفظات فراہم کرنے کے حکومت پر جو الزامات عائد کئے جا رہے تھے، وہ سب نئے اعداد و شمار کے بعد بے بنیاد ثابت ہو رہے ہیں۔ ٹی آر ایس حکومت مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے کے لئے سنجیدہ ہے تو یہ اعداد و شمار مسلم تحفظات کے لئے معاون ثابت ہوسکتے ہیں۔ تلنگانہ میں دیگر اقلیتوں کے مقابلے میں مسلم اقلیت سرفہرست ہے، جب کہ عیسائی دوسرے نمبر پر ہیں، جن کی آبادی 4,47,124 (یعنی 1.3 فیصد) ہے۔ سکھوں کی آبادی 30,340 (یعنی 0.04 فیصد) ہے۔ جین طبقہ کی آبادی 26,690 (یعنی 0.075 فیصد) ہے۔ شہری علاقوں میں مسلمانوں کی آبادی 33,31,440 ہے، جب کہ دیہی علاقوں میں 11,33,253 ہے۔ نئے اعداد و شمار کے مطابق تلنگانہ میں ہندو اور مسلم خواتین کی بہ نسبت مردوں کا تناسب زیادہ ہے، جب کہ عیسائی طبقہ میں خواتین کی تعداد زیادہ اور مردوں کی تعداد کم ہے۔ تلنگانہ میں سب سے زیادہ حیدرآباد میں مسلمانوں کی 17.13 لاکھ آبادی ہے، جب کہ مسلمانوں کی سب سے کم آبادی 1.58 لاکھ ضلع کھمم میں ہے۔ اسی طرح عیسائی طبقہ کی سب سے زیادہ آبادی حیدرآباد اور سب سے کم آبادی ضلع عادل آباد میں ہے۔

جی ایچ ایم سی حدود میں مسلمانوں کی آبادی کا تناسب 21.07 فیصد
حیدرآباد /26 اگست (سیاست نیوز) گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کی جملہ آبادی 69,93,262 ہے، جس میں ہندوؤں کا تناسب 45.40 فیصد اور مسلمانوں کا تناسب 21.07 فیصد ہے۔ نئے اعداد و شمار کے مطابق سارے تلنگانہ میں سب سے زیادہ مسلمان جی ایچ ایم سی کے حدود میں ہیں۔ گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن میں ہندوؤں کی آبادی 45,40,811، مسلمانوں کی آبادی 21,07,047، عیسائی طبقہ کی آبادی 1,92,660، سکھوں کی آبادی 17,303، بدھسٹوں کی آبادی 2451، جین طبقہ کی آبادی 20,480، جب کہ دیگر مذاہب کے ماننے والوں کی تعداد 3137 ہے، جب کہ مذہب کی شناخت نہ بتانے والوں کی تعداد 1,09,343 ہے۔

 

تلنگانہ کی اہم آبادی اور تناسب
جملہ آبادی……  3,51,93,978             100 فیصد
ہندو آبادی …… 2,99,48,451             85.09 فیصد
مسلم آبادی …… 44,64,699                 12.68 فیصد
عیسائی ………  4,47,124                 1.27 فیصد
سکھ ………    30,340                     0.08 فیصد
بدھسٹ ……… 32,553                 0.09 فیصد
جین ………… 26,690                 0.07 فیصد

TOPPOPULARRECENT