Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ وقف بورڈ کا آج اجلاس

تلنگانہ وقف بورڈ کا آج اجلاس

متنازعہ اُمور پر مباحث کا امکان ‘ پہلے مرحلے کے 45اُمور کو قطعیت
حیدرآباد ۔ 22 ۔ مئی (سیاست نیوز) تلنگانہ وقف بورڈ کا اجلاس کل 23 مئی کو حج ہاؤز نامپلی میں منعقد ہوگا۔ صدرنشین محمد سلیم کی صدارت میں یہ اجلاس ہنگامہ خیز ثابت ہوسکتا ہے کیونکہ بعض متنازعہ امور پر مباحث کا امکان ہے۔ ایجنڈہ کے مطابق پہلے مرحلہ میں 45 امور کو قطعیت دی گئی ہے۔ تاہم زائد ایجنڈہ کے طور پر مزید 20 تا 25 امور شامل کئے جاسکتے ہیں۔ گزشتہ اجلاس میں منظورہ بعض قراردادوں پر عدم عمل اور چیف اگزیکیٹیو آفیسر کی جانب سے بعض قراردادوں پر نظرثانی کی درخواست پر مباحث کا امکان ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ مقامی سیاسی جماعت کے حامی ارکان اس مسئلہ کو موضوع بحث بناسکتے ہیں۔ گزشتہ اجلاس میں چند ایک جائیدادوں کے تنازعات پر قطعی فیصلہ نہیں کیا جاسکا تھا اور انہیں کل کے اجلاس کے ایجنڈہ میں شامل کیا گیا ہے ۔ بتایا جاتا ہے کہ حفیظ پیٹ میں واقع درگاہ حضرت سردار اولیاء کے متولی کے تقرر کے سلسلہ میں بعض ارکان نے گزشتہ اجلاس میں تجویز پیش کی تھی۔ صدرنشین نے اس مسئلہ کو کل کے اجلاس تک کیلئے ملتوی کردیا۔ اس درگاہ کے تحت اوقافی اراضی کو پلاٹنگ کرتے ہوئے فروخت کردیا گیا ہے۔ مقامی جماعت سے تعلق رکھنے والے ارکان مستقل متولی کے تقرر کی مانگ کر رہے ہیں۔ اجلاس میں بھینسہ کے مسلم قبرستان کی حصار بندی کیلئے این او سی کی اجرائی کا مسئلہ بھی زیر بحث آسکتا ہے۔ اگرچہ یہ مسئلہ ایجنڈہ میں شامل نہیں ہے۔ تاہم امکان ہے کہ مقامی جماعت کے حامی ارکان این او سی کی اجرائی کیلئے بورڈ پر اثر انداز ہونے کی کوشش کریں گے ۔ اس قبرستان کے سلسلہ میں وقف بورڈ نے متعلقہ انسپکٹر آڈیٹر سے رپورٹ طلب کی ہے ۔ رپورٹ کی وصولی تک وقف بورڈ اس سلسلہ میں کوئی فیصلہ نہیں کرسکتا۔ حکومت اس بات کی کوشش کرے گی کہ برسر اقتدار پارٹی کے نامزد ارکان کسی بھی متنازعہ فیصلہ میں شریک نہ ہوں۔ اجلاس سے قبل حکومت کے نامزد ارکان ایجنڈہ کے مطابق حکمت عملی طئے کرسکتے ہیں۔ اسی دوران صدرنشین بورڈ محمد سلیم نے کہا کہ حج ہاؤز سے متصل زیر تعمیر کامپلکس اور کھلی اراضی کو لیز پر دینے حکومت نے احکام جاری کئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ گلوبل ٹنڈرس طلب کرکے اسے لیز پر دیا جائیگا۔ حکومت نے اگرچہ 11 جائیدادوں کو لیز پر دینے اجازت دی ہے تاہم یہ دو جائیدادیں پہلے مرحلہ میں لیز پر دی جاسکتی ہے کیونکہ ان کے بارے میں کوئی تنازعہ نہیں ہے ۔ محمد سلیم نے اپنے قریبی افراد کو لیز پر دینے کی کوششوں سے متعلق بعض گوشوں کی اطلاعات کو بے بنیاد قرار دیا اور کہا کہ سکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل نے گزشتہ دنوں وقف بورڈ میں جائزہ اجلاس منعقد کرتے ہوئے گلوبل ٹنڈرس طلب کرنے کی ہدایت دی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT