Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیلئے نئی عاملہ کی تشکیل

تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیلئے نئی عاملہ کی تشکیل

رابطہ کمیٹی میں محمد علی شبیر اور ایم اے خان شامل، عابد رسول خان، مقصود احمد، عظمت اللہ حسینی و دیگر جنرل سکریٹریز نامزد
حیدرآباد ۔ 16 اپریل (سیاست نیوز) کانگریس پارٹی ہائی کمان نے تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کی نئی عاملہ تشکیل دی ہے۔ نائب صدر کی حیثیت سے مسٹر عابد رسول خان اور جنرل سکریٹریز کی حیثیت سے مسٹر ایس کے افضل الدین، مسٹر محمد مقصود احمد، مسٹر سید عظمت اللہ حسینی اور محترمہ عظمیٰ شاکر نامزد ہوئی ہیں۔ تلنگانہ پردیش رابطہ کمیٹی مسٹر محمد علی شبیر اور مسٹر ایم اے خان کو شامل کیا گیا ہے۔ آل انڈیا کانگریس کمیٹی کے جنرل سکریٹری مسٹر جناردھن دیویدی نے صدر کانگریس مسز سونیا گاندھی کی منظوری کے بعد تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کا اعلان کیا۔ نئی کمیٹی میں 13 نائب صدور، 31 جنرل سکریٹریز، 35 ارکان عاملہ، 22 مستقل مدعوئین اور 31 رکنی تلنگانہ پردیش رابطہ کمیٹی کا اعلان کیا گیا ہے۔ مسٹر جی نارائن ریڈی کو پارٹی کا خازن بنایا گیا ہے۔ ارکان عاملہ میں قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل مسٹر محمد علی شبیر، کانگریس کے رکن قانون ساز کونسل مسٹر محمد فاروق حسین رکن راجیہ سبھا مسٹر ایم اے خان شامل ہیں۔ مستقل مدعوئین میں مسٹر جابر پٹیل، مسٹر عتیق صدیقی کو شامل کیا گیا ہے۔ ایس کے افضل الدین ترجمان کے عہدے پر فائز تھے۔ انہیں ترقی دیتے ہوئے جنرل سکریٹری نامزد کیا گیا ہے۔ مسٹر محمد مقصود احمد سیٹ ون کے صدرنشین تھے۔ انہیں بھی جنرل سکریٹری کی حیثیت سے نامزد کیا گیا ہے۔ مسٹر سید عظمت اللہ حسینی آل انڈیا یوتھ کانگریس کے جنرل سکریٹری تھے۔ اب ان کی خدمات ریاست کیلئے حاصل کرتے ہوئے جنرل سکریٹری نامزد کیا گیا ہے۔ مسلم خاتون کوٹہ میں محترمہ عظمیٰ شاکر کو جنرل سکریٹری نامزد کیا گیا ہے۔ کمیٹی کا اعلان ہوتے ہی پارٹی قائدین میں خوشی اور غم کا ردعمل دیکھا گیا ہے۔ کمیٹی میں شامل ہونے پر تمام قائدین نے صدر کانگریس مسز سونیا گاندھی، جنرل سکریٹری مسٹر ڈگ وجئے سنگھ اور صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی، کیپٹن اتم کمار ریڈی سے اظہارتشکر کیا ہے۔ کمیٹی میں شامل نہ کئے جانے پر کئی قائدین نے اپنی ناراضگی کا بھی اظہار کیا ہے۔ پارٹی کے کئی سینئر قائدین نے ماضی میں انہیں رابطہ کمیٹی میں شامل نہ کرنے پر اعتراض کیا تھا۔ اس مرتبہ تمام سینئر قائدین کو نمائندگی دی گئی ہے۔ رابطہ کمیٹی میں کیپٹن اتم کمار ریڈی، بٹی وکرامارک، جاناریڈی، محمد علی شبیر، وی ہنمنت راؤ، پنالہ لکشمیا، دامودھر راج نرسمہا، کے آر سریش ریڈی، رینوکا چودھری، بی گووردھن ریڈی، آنند بھاسکر، ای اے خان، جی سکھیندر ریڈی، ومشی چند ریڈی، جئے پال ریڈی، سروے ستیہ نارائنا، گیتاریڈی، ڈی ناگیندر، ایم ششی دھر ریڈی، جی ویویک، مدھویشکی وغیرہ کو نمائندگی دی گئی ہے۔ مستقل مدعوئین میںکانگریس کے محاذی تنظیموں کے تمام صدور کو بھی شامل کیا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT