Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ پولیس کے ویب سائٹ پر ڈگ وجئے سنگھ کے بیان پر سرینواس یادو کے ردعمل کو چیالنج

تلنگانہ پولیس کے ویب سائٹ پر ڈگ وجئے سنگھ کے بیان پر سرینواس یادو کے ردعمل کو چیالنج

مرکزی کانگریس قائد کو عنقریب مونڈا مارکٹ کا دورہ کرایا جائے گا ، محمد علی شبیر کا شدید ردعمل
حیدرآباد ۔ 6 ۔ مئی : ( سیاست نیوز ) : قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل محمد علی شبیر نے ریاستی وزیر ٹی سرینواس یادو کو چیلنج کیا کہ وہ روک کر دکھائے ۔ کانگریس پارٹی بہت جلد وزیر کے گھر کے سامنے یا مونڈا مارکٹ میں ڈگ وجئے سنگھ کا دورہ کرائے گی ۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے محمد علی شبیر نے کہا کہ ڈگ وجئے سنگھ نے تلنگانہ پولیس کی ویب سائیٹ پر جو الزام عائد کیا ہے وہ اس پر برقرار ہے ۔ اور ان کے پاس ثبوت موجود ہے ۔ انہوں نے اپنے بیان پر قائم رہنے کا اعلان کیا ہے ۔ پولیس کی جانب سے یا ٹی آر ایس قائدین کی جانب سے ان کے خلاف مقدمات درج کرنے سے ڈگ وجئے سنگھ خوفزدہ نہیں ہے بلکہ اس کا خیر مقدم کیا ہے ۔ حکومت کی ذمہ داری اس کی تحقیقات کرائے ڈگ وجئے سنگھ نے تلنگانہ پولیس کی ویب سائیٹ پر جو الزام عائد کیا ہے وہ ثبوت بھی پیش کریں گے حکومت وضاحت کرے کہ تلنگانہ پولیس نے مسلم نوجوانوں کو داعش کے جال میں پھنسانے کے لیے فرضی ویب سائیٹ تیار کیا ہے یا نہیں محمد علی شبیر نے کہا کہ کیا یہ صحیح نہیں ہے کہ ویب سائٹ کی وجہ سے 18 مسلم نوجوان متاثر نہیں ہوئے ۔ ویب سائیٹ کی نشاندہی پر مدھیہ پردیش کی حکومت نے انکاونٹر نہیں کیا گیا ۔ چیف منسٹر تلنگانہ کی خاموشی معنی خیز ہے ۔ کے سی آر خاموشی توڑیں تلنگانہ پولیس کے پاس فرضی ویب سائیٹ ہے یا نہیں اس کی وضاحت کریں ۔ ریاستی وزیر انیمل ہسبنڈری ٹی سرینواس یادو کو اے آئی سی سی جنرل سکریٹری ڈگ وجئے سنگھ پر تنقید کرنے کا اخلاقی حق بھی نہیں ہے ۔ پہلے وہ استعفیٰ دے اور ٹی آر ایس کے ٹکٹ پر دوبارہ مقابلہ کریں ۔ تلگو دیشم کے ٹکٹ پر کامیاب ہو کر وزارت میں شامل ہونا دستور کی خلاف ورزی ہے ۔ سرینواس یادو کی جانب سے تلنگانہ میں ڈگ وجئے سنگھ کو گھومنے پھرنے نہ دینے کی دی گئی دھمکی کو مسترد کرتے ہوئے محمد علی شبیر نے کہا کہ اگر پولیس اجازت دیتی ہے تو ڈگ وجئے سنگھ سرینواس یادو کے گھر کے سامنے یا مونڈہ مارکٹ کا دورہ کریں گے ۔ ہمت ہے تو ڈگ وجئے سنگھ کو روک کر دکھائے ۔ قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل محمد علی شبیر نے تمام شعبوں میں ناکام ہوجانے کا ٹی آر ایس حکومت پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ سوچھ بھارت میں شہر حیدرآباد کا مقام گھٹ کر 22 ویں مقام تک پہونچ گیا ہے جب کہ پڑوسی ریاست آندھرا پردیش کے وشاکھا پٹنم کو تیسرا اور تروپتی کو 9 واں مقام حاصل ہوا ہے ۔ ریاستی وزیر آئی ٹی کے ٹی آر نے شہر حیدرآباد کو نیویارک ڈلاس اور استنبول کے طرز پر ترقی دینے کا وعدہ کیا تھا ۔ کروڑ روپئے خرچ کرنے کا اعلان کیا گیا تھا ۔ محمد علی شبیر نے شہر حیدرآباد کی ترقی پر کے ٹی آر کو کھلے عام مباحث کا چیلنج کیا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT