Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کانگریس قائدین کو بی جے پی میں شامل ہونے کی ترغیب

تلنگانہ کانگریس قائدین کو بی جے پی میں شامل ہونے کی ترغیب

2019ء کے انتخابات میں زعفرانی پارٹی کو کامیاب بنانے کی حکمت عملی ، ٹی آر ایس لیڈرس پر بھی نظر
l ڈی سرینواس کے فرزند اروند کی عنقریب بی جے پی میں شمولیت
l نلگنڈہ کے سابق وزراء کا بھی بی جے پی کی طرف جھکاؤ
l امیت شاہ کے آئندہ ماہ دورہ پر کئی قائدین کی شمولیت کا امکان
l مرکزی وزیر لیبر بنڈارو دتاتریہ کا بیان

حیدرآباد۔ 20 اگست (سیاست نیوز) تلنگانہ میں 2019ء کے اسمبلی انتخابات پر نظر رکھتے ہوئے بی جے پی نے کانگریس کے اہم قائدین کو پارٹی میں شامل ہونے کی ترغیب دی ہے۔ کانگریس کے علاوہ دیگر پارٹیوں سے تعلق رکھنے والے اہم قائدین پر بھی زعفرانی پارٹی کی نظر ہے۔ تلنگانہ میں آئندہ اقتدار حاصل کرنے کی جدوجہد کے دوران بی جے پی تمام پارٹیوں کے قائدین کو ’’رِجھانے‘‘ کی کوشش کررہی ہے تاکہ پارٹی اسمبلی انتخابات سے قبل سیاسی طور پر مضبوط بن سکے۔ واضح رہے کہ ٹی آر ایس کے رکن راجیہ سبھا ڈی سرینواس کے فرزند اروند نے پہلے ہی برسرعام اشارہ دیا ہے کہ وہ بہت جلد بی جے پی میں شامل ہوں گے۔ کانگریس کے سینئر قائدین سابق وزیر کومٹ ریڈی وینکٹ ریڈی اور ان کے بھائی کومٹ ریڈی راجگوپال ریڈی جو ضلع نلگنڈہ سے تعلق رکھتے ہیں، نے کہا ہے کہ بی جے پی کی جانب سے پارٹی میں شامل ہونے کی پیشکش کی گئی ہے جس پر وہ بخوشی غور کررہے ہیں۔ بی جے پی نے ان دونوں کو پارٹی میں شامل ہونے کی ترغیب دی ہے۔ کومٹ ریڈی برادران پردیش کانگریس اُمور کے انچارج آر سی کنٹیا اور این اتم کمار ریڈی کی کارکردگی اور بیانات سے ناخوش ہیں۔ کنٹیا نے سال 2019ء کے انتخابات تک اتم کمار ریڈی کو تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کی قیادت کرنے کا اعلان کیا ہے۔ ان دونوں قائدین نے کانگریس ہائی کمان سے نمائندگی کرتے ہوئے کنٹیا کے فیصلہ کو واپس لینے کا مطالبہ کیا تھا لیکن کانگریس نے ان کے مطالبہ کو مسترد کردیا۔ اس کے بعد یہ دونوں قائدین پارٹی سے ناراض ہوگئے۔کانگریس اور تلگو دیشم کے بعض سینئر قائدین کو بھی بی جے پی میں شامل کیا جارہا ہے۔ ٹی آر ایس کے ناراض قائدین کا جھکاؤ بھی بی جے پی کی جانب ہے۔ مودی حکومت کو یقین ہے کہ وہ 2019ء کے انتخابات میں دوبارہ اقتدار حاصل کرے گی، اس لئے دیگر پارٹی کے قائدین بی جے پی کی طرف دلچسپی دکھا رہے ہیں۔ اسی دوران مرکزی وزیر لیبر بنڈارو دتاتریہ نے نظام آباد میں کہا کہ صدر بی جے پی امیت شاہ کے دورہ تلنگانہ کے موقع پر کانگریس اور ٹی آر ایس کے کئی قائدین بی جے پی میں شامل ہوں گے۔ بی جے پی ریاستی عاملہ کا آج اجلاس منعقد ہوا جس میں ریاست کے عوام کے مسائل پر توجہ دینے اور آئندہ کی حکمت عملی کو قطعیت دینے پر غور کیا گیا۔ بی جے پی ریاستی صدر کے لکشمن نے اس اجلاس کی قیادت کی۔ مرکزی وزیر لیبر و ایمپلائمنٹ بنڈارو دتاتریہ کل شام نظام آباد میں صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ بی جے پی قومی صدر امیت شاہ کے دورہ کے موقع پر بڑے پیمانے پر دیگر پارٹیوں سے وابستہ قائدین بی جے پی پارٹی میں شمولیت اختیار کرنے والے ہیں اور ستمبر کی 12,11,10تاریخوں میں بی جے پی کے قومی صدر امیت شاہ تلنگانہ کا دورہ کررہے ہیں مسٹر بنڈارو دتاتریہ نظام آباد میں مصروف ترین دورہ کے موقع پر پارٹی آفس میں سابق ایم ایل سی دہلی ، سابق رکن اسمبلی لکشمی نارائنا کے ہمراہ صحافیو ں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ نظام آباد ضلع کے علاوہ دیگر اضلاع سے تعلق رکھنے والے کئی سینئر قائدین بی جے پی پارٹی میں شمولیت کیلئے کوشاں ہے۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT