Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / تلنگانہ کا بجٹ 1.41 لاکھ کروڑ سے زائد ہونے کی توقع

تلنگانہ کا بجٹ 1.41 لاکھ کروڑ سے زائد ہونے کی توقع

حیدرآباد 12 مارچ (سیاست نیوز) ریاست تلنگانہ کا سال 2017-18 ء کے لئے سالانہ بجٹ (1.41) لاکھ کروڑ روپیوں پر مشتمل ہوگا بلکہ اس سے بھی زائد ہونے کی توقع کی جارہی ہے جبکہ گزشتہ سال کا سالانہ بجٹ 1.30 لاکھ کروڑ روپئے تھا۔ لیکن اس مرتبہ حکومت اپنے بجٹ میں مزید 11 ہزار کروڑ روپئے اضافہ کا ارادہ رکھتی ہے لہذا اسی مناسبت سے چیف منسٹر کے چندرشیکھر راؤ کی ہدایت پر وزیر فینانس ایٹالہ راجندر نے مرتب کردہ بجٹ میں گزشتہ سال کے مقابلہ میں نئے مالیاتی سال کے بجٹ میں ممکنہ حد تک اضافہ کی کوشش کی۔ باوثوق سرکاری ذرائع نے یہ بات بتائی اور کہاکہ اس مرتبہ جیسا کہ گزشتہ دن چیف منسٹر کے چندرشیکھر راؤ نے اسمبلی میں گورنر کے خطبہ پر پیش کردہ تحریک تشکر کے سلسلہ میں ہوئے مباحث کا جواب دینے کے دوران پسماندہ طبقات کی فلاح و بہبود کے لئے اس مرتبہ زیادہ سے زیادہ رقومات مختص کئے جانے کا اشارہ دیا تھا۔ اسی مناسبت سے وزیر فینانس نے پسماندہ طبقات کی فلاح و بہبود کے لئے زیادہ سے زیادہ رقومات مختص کرنے پر اولین ترجیح دی ہے۔ علاوہ ازیں مختلف طبقات اور ڈبل بیڈ روم مکانات کی تعمیر، تعلیمی و طبی جیسے اہمیت کے حامل شعبوں کے لئے بھی زیادہ سے زیادہ رقومات مختص کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔ وزیر فینانس ایٹالہ راجندر نے گزشتہ شب دیر گئے تک محکمہ فینانس کے عہدیداروں سے تبادلہ خیال کرتے ہوئے سال 2017-18 ء کے ریاستی بجٹ کو قطعیت دی ہے اور توقع ہے کہ کابینہ میں پیشکشی کے بعد اس بجٹ کی ایوان اسمبلی میں پیشکشی کی منظوری دی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT